ٹیچر ہلاکت کیس،انکوائری میں پرنسپل کو بری کوکرنیکی تیاریاں

ٹیچر ہلاکت کیس،انکوائری میں پرنسپل کو بری کوکرنیکی تیاریاں

  

ملتان (خصوصی رپورٹر) گورنمنٹ گرلز ہائی سکول مینگو ریسرچ سنٹر میں ٹیچر کی موت کی انکوائری میں پرنسپل کو بری کرنے کی تیاریاں کی جارہی ہیں ذرئع کے مطابق دو ہفتے قبل شدید بیمار(بقیہ نمبر49صفحہ7پر )

معلمہ شہناز ظفر کو پرنسپل مہہ جبیں نے چھٹی کی اجازت نہیں دی اور گھرسے زبردستی سکول ڈیوٹی آنے پر مجبور کیا جس کی حالت مزید بگڑ گئی اور سکول سے واپسی پرائیویٹ ہسپتال داخل ہونا پڑا جہاں سے نشتر ہسپتال ریفر کر دیا گیا جہاں ڈاکٹروں نے اس کی ہارٹ اٹیک سے موت کی تصدیق کر دی۔میڈیامیں معاملہ آنے اور معلمات کی طرف سے حکام کو پرنسپل مہہ جبیں کے خلاف درخواستیں دینے پر محکمہ تعلیم سکولز پنجاب کے حکام کے نوٹس لینے پر سی ای او ایجوکیشن ملتان مختار حسین نے انکوائری کے نام پر مہہ جبیں کو کلیئر کرنے کا پروگرام بنالیا ہے جبکہ دوسری طرف پرنسپل مہہ جبیں نے پلان کے تحت سکول کی دیگر معلمات کو ’’رام ‘‘ کرنا شروع کر دیا ہے اورانکے رویے میں بہتری آگئی ہے جبکہ ذرئع کا کہنا ہے کہ معلمہ شہناز ظفر نے2اکتوبر کو سکول کے رجسٹر پر حاضری لگائی تھی اور اسی روز جبری ڈیوٹی کے باعث وہ چلی بسی۔ پرنسپل مہہ جبیں نے وہ رجسٹر ہی تبدیل کر دیا اور نیا رجسٹر حاضری جاری کرکے اس پر دوبارہ سٹاف کی حاضریاں لگوائی ہیں۔تعلیمی حلقوں نے کمشنر عمران سکندر بلوچ اور ڈپٹی کمشنر مدثر ریاض ملک سے صورتحال کا نوٹس لے کر ایکشن لینے کا مطالبہ کیا ہے۔

ٹیچر ہلاکت

Back to Conversion Tool

مزید :

ملتان صفحہ آخر -