اپوزیشن کا قومی اسمبلی کا اجلاس طلب کرنے پر ریکوزیشن واپس لینے کا عندیہ

اپوزیشن کا قومی اسمبلی کا اجلاس طلب کرنے پر ریکوزیشن واپس لینے کا عندیہ

  

اسلام آباد (صباح نیوز) اپوزیشن نے جلد قومی اسمبلی کا اجلاس طلب کرنے کی صورت میں ریکوزیشن واپس لینے کا عندیہ دیدیا۔ قومی اسمبلی کا شیڈول اجلاس 29 اکتوبر سے متوقع ہے۔ اس بارے میں اسمبلی کے وضع کردہ شیڈول میں ان تاریخوں کو اجلاس طلب کرنے کی سمری کی تیاری شروع کر دی گئی ہے۔ یہ اجلاس 12 دنوں تک جاری رہنے کا امکان ہے۔ ذرائع کا دعویٰ ہے کہ پاکستان مسلم لیگ (ن) کی طرف سے اسپیکر چیمبر کو عندیہ دیا گیا ہے کہ اگر بروقت شیڈول اجلاس طلب کر لیا جاتا ہے تو اجلاس کی ریکوزیشن سے دستبردار ہوا جا سکتا ہے۔ یاد رہے کہ یہ ریکوزیشن گزشتہ روز 90 سے زائد ارکان کے دستخطوں سے کی گئی ہے۔ پاکستان مسلم لیگ (ن) اور متحدہ مجلس عمل اس کی محرک ہے۔ ریکوزیشن کی وجہ قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر کی جانب سے احتسابی معاملے پر اٹھائے گئے سوالات کو زیربحث لانا اور تحقیقات کے لئے کمیٹی کے قیام کا دباؤ ڈالنا ہے۔

اپوزیشن عندیہ

مزید :

کراچی صفحہ اول -