مردان ،حلقہ پی کے 53 انتخاب ،اے این پی کے امیدوار کا دوبارہ گنتی پر تحفظات کا اظہار

مردان ،حلقہ پی کے 53 انتخاب ،اے این پی کے امیدوار کا دوبارہ گنتی پر تحفظات کا ...

  

مردان ( بیورورپورٹ) حلقہ پی کے 53کے ضمنی انتخابات میں ووٹوں کی دوبارہ گنتی کے تیسرے روز اے این پی کے امیدوار احمد بہادرخان نے شدید تحفظات کے بعد گنتی سے احتجاجا بائیکاٹ کردیااورنتائج کو یکسر مسترد کرتے ہوئے حلقے میں دوبارہ انتخابات کرانے کا مطالبہ کردیا دوسری جانب عوامی نیشنل پارٹی نے ریٹرنگ آفیسر پر جانبداری کے الزامات عائد کرتے ہوئے اس کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیاہے جمعہ کے روز ووٹوں کی دوبارہ گنتی کے تیسرے رو ز اے این پی کے امیدوار احمد بہادرخان نے احتجاجاًبائیکاٹ کیا جس کے بعد پارٹی نے صورت حال پرہنگامی اجلاس طلب کیا اور پریس کلب کے سامنے زبردست احتجاجی مظاہرہ کیا جس میں الیکشن نتائج کو مسترد کرتے ہوئے اس کے خلاف شدید نعرہ بازی کی گئی کارکنوں نے پلے کارڈز اٹھاررکھے تھے جن پر الیکشن نامنظور کے نعرے درج تھے بعدازاں ہنگامی پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے حاجی احمد خان بہادر ،پارٹی کے ضلعی صدر حمایت اللہ مایار ، جنرل سیکرٹری حاجی لطیف الرحمان ،نائب صوبائی صدر جاوید یوسفزئی اوردیگر نے کہاکہ یہ تاریخ کے پہلے انتخابات تھے جس کے چار بار نتائج جاری کئے گئے پہلے نتائج میں ہماری کامیابی کا اعلان ہوا جس کے بعد تحریک انصاف کے امیدوار کی کامیابی کا نوٹی فیکشن جاری کیاگیا انہوں نے کہاکہ تمام بے ضابطیگیوں کے باوجود ہم نے دوبارہ گنتی کے عمل میں حصہ لیالیکن گنتی کے دوران جس بھی پولنگ سٹیشن کا تھیلا نکالاجاتا اس کا سیل ٹوٹا ہواپایا جس کا موقع پر ریٹرنگ آفیسر کو نشاندہی کی گئی لیکن وہ ہمارے کسی اعتراض کو ماننے کو تیارنہیں تھاجس پر ہم نے مجبورہوکر گنتی سے بائیکاٹ کیا انہوں نے کہاکہ ڈپٹی الیکشن کمشنر جو ریٹرنگ آفیسر تھے نے قاتل اور منصف کا کردار اداکیاجس کے خلاف عدلیہ سمیت ہر فورم پر احتجاج کیاجائے گا انہوں نے مطالبہ کیاکہ حلقہ پی کے 53میں دوبارہ انتخابات کرائے جائیں۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -