ایک ماہ میں دوسری بار گیس قیمتوں میں 462 فیصد تک اضافہ

ایک ماہ میں دوسری بار گیس قیمتوں میں 462 فیصد تک اضافہ
ایک ماہ میں دوسری بار گیس قیمتوں میں 462 فیصد تک اضافہ

  

اسلام آباد(ویب ڈیسک) حکومت نےزیرو ریٹڈ انڈسٹریز کے کیپٹو پاور پلانٹس کے کم سے کم گیس چارجز میں 462فیصد اضافہ کردیاجس کے ساتھ ہی گیس کی نئی ماہانہ قیمت 3600روپےسے بڑھ کر 20232روپے ماہانہ ہوگئی، ادھر آئل اینڈ گیس ریگولیٹری اتھارٹی (اوگرا) نے سرکاری دفاتر، ہسپتالوں، تعلیمی اداروں سمیت کمرشل صارفین کے لیے گیس کی قیمتوں میں ایک ماہ کے دوران دوسری مرتبہ اضافہ کردیاہے تاہم ترجمان اوگرا نے اس نوٹیفکیشن کو قیمتوں میں اضافے کے حوالے سے جاری ہونے پہلے نوٹیفکیشن کی تصیح قرار دیا ہے۔

روزنامہ جنگ کے مطابق قیمتوں میں اضافے کے نوٹیفکیشن کے مطابق رہائشی کالونیز، فلاحی اداروں، سرکاری دفاتر، اسپتالوں، مسلح افواج کے میس، یونیورسٹیز، کالجز، اسکولوں اور نجی تعلیمی اداروں کے لیے ماہانہ گیس فکسڈ چارجز 30فیصد اضافے کے ساتھ 3ہزار 600روپے سے بڑھا کر 4 ہزار 680 روپے کر دیے گئے گئے ہیں۔اس کے ساتھ ہی کمرشل صار فین، کیفے، بیکریز، ملک شاپ، کینٹین، ہوٹلز، تجارتی مالز کے لیے بھی گیس مہنگی کردی گئی۔کمرشل صارفین اور آئس فیکٹریوں کے لیے ماہانہ گیس فکسڈ چارجز ایک ہزار 2 سو 25 روپے اضافے کے بعد 5 ہزار 8 سو 80 روپے مقرر کردئیے گئے۔خیال رہے کہ حکومت نے رواں ماہ 4 اکتوبر کو گھریلو، کمرشل اور صنعتی صارفین کے لیے گیس کے نرخوں میں 10 سے ایک سو 43 فیصد تک اضافہ کیا تھا۔گیس کے نرخوں میں گزشتہ 4 سال کے دوران کسی قسم کا اضافہ نہیں کیا گیا تھا لیکن وزیر خزانہ اسد عمر کی زیر صدارت اقتصادی رابطہ کمیٹی کے اجلاس کے بعد 17 ستمبر کو گیس کے نرخوں میں اضافے کی منظوری دی گئی تھی۔

مزید :

علاقائی -اسلام آباد -