17 سال کی 3 پاکستانی لڑکیاں اور 7 پاکستانی مرد۔۔۔ دبئی سے انتہائی شرمناک خبر آگئی

17 سال کی 3 پاکستانی لڑکیاں اور 7 پاکستانی مرد۔۔۔ دبئی سے انتہائی شرمناک خبر ...
17 سال کی 3 پاکستانی لڑکیاں اور 7 پاکستانی مرد۔۔۔ دبئی سے انتہائی شرمناک خبر آگئی

  

دبئی سٹی(مانیٹرنگ ڈیسک)پاکستانی شہریوں کی بہت بڑی تعداد بیرون ملک جا کر محنت مشقت کرتی ہے۔ یہ لوگ اپنے لئے روزی کماتے ہیں اور ملک کے لئے قیمتی زرمبادلہ کے ساتھ نیک نامی کا باعث بھی بنتے ہیں، مگر بدقسمتی سے کچھ ایسے شیطان صفت بھی باہر چلے جاتے ہیں جو ملک و قوم کے لئے صرف بدنامی کا باعث بنتے ہیں۔ پاکستانی لڑکیوں کو روزگار کے بہانے خلیجی ممالک لے جا کر اُن سے جسم فروشی کا دھندہ کروانے والے بدبخت بھی ایک ایسی ہی مثال ہیں۔ ایک ایسا ہی سفاک گروہ دبئی میں پکڑا گیا ہے۔ یہ بے حس مجرم کم عمر لڑکیوں کو امارات لے جا کر اُن سے دھندہ کروا رہے تھے۔ سات مردوں اور اُن کی ساتھی خاتون نے چند ماہ قبل تازہ ترین واردات کی جب وہ تین لڑکیوں کو نوکری دلوانے کے بہانے دبئی لے کر آئے اور پھر انہیں ایک قحبہ خانے میں جسم فروشی پر لگا دیا۔

گلف نیو زکے مطابق تینوں لڑکیوں کی عمر 17 سال ہے اور متحدہ عرب امارات میں بظاہر سیلز گرل کے طور پر کام کرنے والی ایک خاتون دسمبر 2017میں انہیں ملازمت دلانے کے بہانے پاکستان سے لے کر آئی۔ اس نے تینوں لڑکیوں کو دبئی لانے کیلئے ان کی جعلی دستاویزات بھی بنوائیں اور دبئی لا کر انہیں ایک قحبہ خانے میں دھندے پر مجبور کر دیا۔

دبئی پولیس کے اینٹی ہیومن ٹریفکنگ ڈیپارٹمنٹ کو ایک مخبر نے اطلاع دی تھی کہ پاکستان سے تین کم عمر لڑکیوں کو دبئی لا کر ان سے جسم فروشی کا دھندہ کروایا جا رہا ہے۔ پولیس کا ایک اہلکار گاہک کا روپ دھار کر قحبہ خانے میں گیا اور تمام معلومات حاصل کرلیں، جن کی بناءپر ملزمان کو رنگے ہاتھوں پکڑ لیا گیا۔

گرفتار کیے گئے افراد کی کل تعداد 6 ہے جن میں پانچ مرد اور ایک خاتون شامل ہے۔ ایک ملزم موقعے سے فرار ہونے میں کامیاب ہوگیا تاہم اس کی تلاش جاری ہے۔ عدالت کی جانب سے باقی تمام ملزمان کو پانچ سال قید کی سزا سنا دی گئی ہے۔

مزید :

عرب دنیا -