جرمنی کی غزہ میں تعمیر نو کے لیے 80 لاکھ یورو کی اضافی امداد

جرمنی کی غزہ میں تعمیر نو کے لیے 80 لاکھ یورو کی اضافی امداد
جرمنی کی غزہ میں تعمیر نو کے لیے 80 لاکھ یورو کی اضافی امداد

  

مقبوضہ بیت المقدس (صباح نیوز)جرمنی کی حکومت نے فلسطین کے جنگ سے تباہ حال علاقے غزہ میں گھروں سے محروم شہریوں کیلئے مکانات کی تعمیر کی مد میں 80 لاکھ یورو کی اضافی امداد دینے کا اعلان کیا ہے۔

مرکزاطلاعات فلسطین کے مطابق یہ رقم جرمن ترقیاتی بنک کی طرف سے "UNOPS" کے توسط سے خرچ کی جائے گی۔ جرمنی کی طرف سے نئے امدادی پیکج کا مقصد غزہ کی پٹی میں شہریوں کی بحالی، آباد کاری اور ان کی رہائش کی سہولیات کو بہتر کرنا ہے۔ جولائی میں جرمن حکومت نے غزہ کی پٹی میں 345گھروں کی تعمیر میں مدد کے لیے13 سے 15ملین یورو کی امداد فراہم کرنے کی ایک یادداشت منظور کی گئی تھی۔ جرمن حکومت مجموعی طور پرغزہ کی پٹی میں اسرائیلی بمباری سے تباہ ہونیوالے 566گھروں کی تعمیر کی مد میں 21ملین یورو سے زائد کی رقم صرف کررہی ہے۔

رپورٹ کے مطابق اسی اثنا میں راملہ میں جرمن قائم مقام سفیر بیرناڈ کوبارٹ نے کہا کہ ان کے ملک نے غزہ کی پٹی میں تعمیر نو کے لیے 2014 کے بعد 10کروڑ یورو کی امداد فراہم کی ہے۔انہوں نے کہا کہ جرمنی کی طرف سے غزہ کی پٹی میں نہ صرف گھروں کی تعمیر میں مالی مدد کی بلکہ جرمن امداد کے نتیجے میں غزہ میں شہریوں کو روز گار کے مواقع بھی ملے۔

مزید :

بین الاقوامی -