پاک آسٹریلیا تجارت میں اضافے کی وسیع گنجائش ہے‘ مارک مورلے

پاک آسٹریلیا تجارت میں اضافے کی وسیع گنجائش ہے‘ مارک مورلے

  



لاہور(لیڈی رپورٹر)آسٹریلیا کے ٹریڈ کمشنر مارک مورلے نے کہا ہے کہ آسٹریلیا اور پاکستان کے درمیان تجارت میں اضافے کی وسیع گنجائش ہے، مشترکہ کوششوں کے ذریعے انہیں تمام مواقع سے بھرپور فائدہ اٹھانا چاہیے۔ انہوں نے ان خیالات کا اظہار لاہور چیمبر میں منعقدہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ لاہور چیمبر کے صدر عرفان اقبال شیخ، سینئر نائب صدر علی حسام اصغر، نائب صدر میاں زاہدجاوید احمد، آسٹریلیا کے ریجنل بزنس ڈویلپمنٹ مینیجر عمران سعید خان، ایگزیکٹو کمیٹی ممبران حارث عتیق، ذیشان سہیل ملک، شیخ سجاد افضل اور عامر انور نے بھی اس موقع پر خطاب کیا۔ آسٹریلین ٹریڈ کمشنر نے کہا کہ دونوں ممالک اچھے پارٹنرز اور بہترین تعلقات کے حامل ہیں۔ انہوں نے کہا کہ آسٹریلیا مائننگ ٹیکنالوجی، ایجوکیشن، ڈیری، لائیوسٹاک اور دیگر بہت سے شعبوں میں پاکستان کے ساتھ تعاون کو فروغ دینا چاہتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان سے آنے والے تجارتی وفود کو گرمجوشی سے خوش آمدید کہا جائے گا۔

آسٹریلیا کے بزنس ڈویلپمنٹ مینیجر عمران سعید خان نے کہا کہ دونوں ممالک تجارت کے لیے نئی مصنوعات متعارف کرائیں۔ انہوں نے کہا کہ دونوں ممالک کے نجی شعبے کو خوراک، توانائی، ڈیری، لائیوسٹاک اور دیگر شعبوں میں مشترکہ منصوبہ سازی کا آغاز کرنا چاہیے۔ لاہور چیمبر کے صدر عرفان اقبال نے بتایا کہ رواں سال کو لاہور چیمبر نے ایکسپورٹ ایئر قرار دیا ہے، برآمدات بڑھانے کے لیے خصوصی کوششیں کی جائیں گی۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان اور آسٹریلیا کے درمیان بہترین تعلقات ہیں مگر باہمی تجارت اس کی نمائندگی نہیں کرتی۔ انہوں نے کہا کہ تجارت کا توازن آسٹریلیا کے حق میں ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایگری بزنس، تعلیم، آئل اینڈ گیس، انفارمیشن ٹیکنالوجی، کمیونیکیشن اور پراسیسڈ فوڈ کے شعبوں میں بھی سرمایہ کاری کے مواقع موجود ہیں جن سے آسٹریلوی سرمایہ کاروں کو فائدہ اٹھانا چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان ایک زرعی ملک ہے لیکن بدقسمتی سے بہت سی پیداوار پوسٹ ہارویسٹ ٹیکنالوجی نہ ہونے کی وجہ سے ضائع ہوجاتی ہے۔ لاہور چیمبر کے سینئر نائب صدر علی حسام اصغر اور نائب صدر میاں زاہد جاوید احمد نے کہا کہ پاکستان بیس کروڑ سے زائد افراد پر مشتمل ایک بڑی مارکیٹ ہے جبکہ یہاں سستی مگر بہترین افرادی قوت دستیاب ہے۔ انہوں نے کہا کہ باہمی تجارت کے فروغ میں ایوان ہائے صنعت و تجارت اہم کردار ادا کرسکتے ہیں جبکہ نمائشیں اور میلہ جات بھی تجارت بڑھانے کا بہترین ذریعہ ہیں لہذا دونوں ممالک کو اس جانب توجہ دینی چاہیے۔

مزید : کامرس /رائے /اداریہ