موجودہ حکومت آزادی مارچ سے قبل ختم ہو جائیگی:ہمایوں خان

موجودہ حکومت آزادی مارچ سے قبل ختم ہو جائیگی:ہمایوں خان

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


بٹ خیلہ(بیورورپورٹ) سابق صوبائی خزانہ اور پاکستان پیپلز پارٹی کے صوبائی صدر انجینئر محمد ہمایون خان نے کہا ہے کہ موجودہ حکومت کومذید ایک دن بھی دینا ملک اور قوم کیساتھ زیادتی اور ظلم ہو گی۔عمران خان پر زلزلہ طاری ہو گیا ہے اور 31کتوبر سے پہلے پہلے موجودہ حکومت ختم ہو جائیگی۔موجودہ حکومت کے خلاف ہونے والا آزادی مارچ صرف جمعیت علماء اسلام کا نہیں بلکہ پورے اپوزیشن کا مشترکہ مارچ ہے جس میں پی پی پی تمام پارٹیوں سے کئی قدم آگے ہو گی۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے یونین کونسل کوٹ میں سابق اُمیدوار صوبائی اسمبلی فیاض گل کی خاندان اور ساتھیوں سمیت پی پی پی میں شمولیت کے موقع پر ایک بڑے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔سابق ضلعی ناظم اور ضلعی صدر سید احمد علی شاہ باچہ کے زیر صدارت منعقدہ ہونے والے اجتماع سے سابق ایم پی اے سید محمد علی شاہ باچہ، سابق اُمیدوار صوبائی اسمبلی فیاض گل،پی پی پی کے ضلعی جنرل سیکرٹری غلام صدیق چیئرمین، فائید گل اور عجب سید نے بھی خطاب کیا۔اجتما ع کے دوران سابق اُمیدوار صوبائی اسمبلی پی کے 19فیاض گل نے خاندان اور سینکڑوں ساتھیوں سمیت پی پی پی میں شمولیت کا باقاعدہ اعلان کیا جبکہ اس دورا ن18اکتوبر کے سانحہ کارسازکے شہداء کے درجات بلندی کے لئے خصوصی دعا بھی کی گئی۔ صوبائی صدر محمد ہمایون خان نے کہا کہ آزادی مارچ سب سیاسی جماعتوں کا مشترکہ مارچ ہے جس میں پی پی پی تمام جماعتوں سے بھی دو قدم آگے ہو گی اور ہمیں پورا یقین ہے کہ 31اگست سے قبل ہی عمران خان حکومت ختم ہو جائیگی کیونکہ آزادی مارچ کا سنتے ہی عمران خان پر زلزلہ طاری ہو گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ناقص حکمت عملی اور ناکام خارجہ پالیسی کی وجہ سے نہ صرف کشمیر کاذ کو نقصان پہنچا ہے بلکہ عالمی سطع پر پاکستان تنہا ہوتا جارہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پی پی پی نے ہمیشہ غریب عوام کے ترقی کے لئے اقدامات کئے ہیں اور یہی وجہ ہے کہ آج ملک بھر کے غریبوں کے دلوں میں پی پی پی کا محبت بڑھتا جارہا ہے۔صوبائی صدر نے کہا کہ موجودہ حکومت نے عوام اور ملک کو تباہی کے دہانے پر پہنچا دیا ہے۔ مہنگائی کے طوفان اور بے روزگاری نے عوام کی زندگی اجیرن بنا دی ہے اس لئے پی پی پی کے کورکمیٹی کے فیصلے کے مطابق آزادی مارچ میں بھر پور شرکت کرکے عمران نیازی حکومت کا بسترہ گول کرینگے کیونکہ سب کو معلوم ہے کہ موجودہ حکومت کو ایک دن مذید دینا بھی ملک و قوم کیساتھ ظلم ہو گی۔ اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے سابق ایم پی اے سید محمد علی شاہ باچہ نے کہا کہ موجودہ حکومت کے ناقص پالیسیوں سے ملک میں گیس، بجلی،مہنگائی، بد آمنی، لاقانونیت اور بے انصافی میں دھڑا دھڑ اضافہ ہوا ہے جس سے ملک دیوالیہ ہونے کے قریب ہے۔ ایک کرو ڑ نوکریوں اور پچاس لاکھ گھربنانے کی بجائے لنگر خانے اور مرغیوں کا پروگرام شروع کیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ سلیکٹڈ عمران خان فرار کی راہ اختیار کر رہے ہے۔  انہوں نے کہا کہ میں نے اپنے دور میں اتمان خیل قوم پر مشتمل علاقوں میں پرائمری سکولوں سے لیکر ڈگری کالجز، ہسپتال، آبنوشی اسکیمیں، بجلی اور روڈز بنا کرسے پسماندگی کا لیبل اُتار دیا ہے لیکن اب پی ٹی آئی کے موجودہ آراکین ہمارے دور کے ترقیاتی اسکیموں پر تختیاں لگا کر افتتاح کررہے ہیں جس پر انہیں شرم آنی چاہئے۔ اگر ان آراکین میں ہمت ہے تو اپنا کوئی پراجیکٹ لاکر دکھائیں۔سید محمد علی شاہ باچہ نے کہا کہ آج صنعت کار، تاجر، آساتذہ اور ڈاکٹرز سمیت ہر مکتبہ فکر کے لوگ سراپا احتجاج ہیں اور تاجر مسائل حل کرنے کے لئے آرمی چیف سے ملاقاتیں کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ 31اکتوبر کو آزادی مارچ میں بھر پور شرکت کرینگے اورعوام کو اس نالائق حکومت سے نجات دلائینگے۔ انہوں نے کہا کہ تبدیلی کے نام پر عوام کو تباہ کیا گیا جس سے عوام کی قوت خرید ختم ہو کر رہ گئی ہے اور غریب عوام مجبور ہو چکے ہیں کہ پیٹ کا بھوک مٹانے کے لئے چوریاں کریں۔