مٹہ،اتفاق بازار کا ٹیکسوں کیخلاف عدالت جانے کا فیصلہ 

مٹہ،اتفاق بازار کا ٹیکسوں کیخلاف عدالت جانے کا فیصلہ 

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

 
مٹہ (نمائندہ پاکستان) اتفاق ایسوسی ایشن مٹہ بازار نے لگنے والی ممکنہ ٹیکسوں کی خلاف عدالت جانے کااعلان کردیا مٹہ بازار کو بند کرنے کو تیار ہے لیکن ٹیکس مانے کو تیار نہیں ملاکنڈ ڈویژن فری ٹیکس زون ہے اور فری ٹیکس زون رہیگی بازار کی دوکانداروں اور ذمہ داروں کا مشترکہ اعلان تفصیلات کی مطابق گذشتہ روز اتفاق ایسوسی ایشن مٹہ بازار کاایک ہنگامی اجلاس زیر صدارت تاحیات چیف ارگنائزر قاسم کاکا منعقد ہوا جس میں بازار کے صدر محمد زوبیر جنرل سیکرٹری عثمان غنی اور دیگر دوکانداروں نے شرکت کی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے تاحیات چیف ارگنائزر قاسم کاکا صدر محمد زوبیر جنرل سیکرٹری عثمان غنی اور خائستہ باچا نے خطاب کی انہوں نے کہا کہ مٹہ بازار سمیت پوری سوات اور ملاکنڈ ڈویژن کی عوام مزید ٹیکسوں کی بوجھ برداشت کرنے کی طاقت نہیں رکھتے کیونکہ اس سے پہلے یہاں کی عوام نے بہت بڑی قربانیاں دی ہیں اور مصیبتیں برداشت کی ہیں انہوں نے کہا کہ ملاکنڈ ڈویژن حکومت وقت کے ذمہ داروں کی مطابق ایک ٹیکس فری زون ہے اور یہاں پر ٹیکس لگانے کی کوئی قانونی جواز نہیں انہوں نے کہا کہ مٹہ بازار کی تمام دوکاندار بازار کو بند کرنے کو تیار ہے لیکن کسی قسم کی ٹیکس ماننے کو تیار نہیں اس موقع پر ایک قراداد کی شکل میں تمام دوکانداروں نے بازار ذمہ داروں کو اختیار دیکر ممکنہ لگنے والے ٹیکسوں کی خلاف عدالت جانے کا فیصلہ کیا اور ممکنہ ٹیکسوں کی خلاف بھرپور احتجاج اور کسی بھی قربانی سے دریغ نہ کرنے کا عہد کیا