مقدمات کے اندراج میں 23 فیصد اضافہ دیکھنے میں آیاہے، آئی جی سندھ

  مقدمات کے اندراج میں 23 فیصد اضافہ دیکھنے میں آیاہے، آئی جی سندھ

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


کراچی(کرائم رپورٹر)آئی جی سندھ ڈاکٹرسید کلیم امام کے واضح احکامات پر سندھ پولیس جرائم کیخلاف انتہائی مستعدی سے سرگرم عمل ہے جبکہ پولیس اپنے مجموعی امور واقدامات میں مفاد عامہ اور ہر سطح پر عوام دوست ماحول کے فروغ کو بھی ترجیح دے رہی ہے۔شہریوں کی شکایات پر ایف آئی آرز کے اندراج کے حوالے سے آئی جی سندھ کی تھانہ سپروائزری افسران کو رہنما ہدایات کے نتیجے میں مذکورہ دورانئے کے دوران ایف آئی آرز کے اندراج میں 23 فیصد اضافہ دیکھنے میں آیا۔جاری اعلامیئے کے مطابق ستمبر2018 تا ستمبر2019مجموعی طور پر81ہزار344 ایف آئی آرز درج کی گئیں جبکہ ستمبرسال2017/ 2018کے مذکورہ دورانیئے میں 65945ایف آئی آرز درج ہوئی تھیں۔عوام دوست پولیسنگ اوربہترین ومؤثر انٹیلی جینس کی بدولت جرائم پیشہ عناصر اور انکے گروہوں کی بیخ کنی کی جائے۔گرفتار ملزمان کی شناخت اور انکے خلاف درج مقدمات کی معلومات کے لیئے ضلعی کریمنل ریکارڈ مینجمنٹ سسٹم سے استفادہ کیا جائے۔سندھ کے 30 تمام ضلعوں میں یہ نظام کام کررہا ہے۔سندھ کی19جیلوں میں بھی کریمنل ریکارڈ مینجمنٹ سسٹم موجود اور قابلِ عمل ہے۔حیدرآباد کی تین جیلوں میں بھی یہ سسٹم جلد کام شروع کردیگا۔آئی جی سندھ نے کہاکہ ملزمان کے آن لائن ڈیٹا شیئرنگ کے لیئے پنجاب،سندھ اور بلوچستان اس نظام کے تحت باہم منسلک ہیں۔

مزید :

صفحہ آخر -