”بابراعظم کے کندھوں پر بھاری ذمہ داری ڈال دی گئی ہے اور۔۔۔“ جاوید میانداد بھی خاموش نہ رہ سکے

”بابراعظم کے کندھوں پر بھاری ذمہ داری ڈال دی گئی ہے اور۔۔۔“ جاوید میانداد ...
”بابراعظم کے کندھوں پر بھاری ذمہ داری ڈال دی گئی ہے اور۔۔۔“ جاوید میانداد بھی خاموش نہ رہ سکے

  



لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان کرکٹ ٹیم کے مایہ ناز سابق بلے باز جاوید میانداد نے سرفراز احمد کو کپتانی سے ہٹانے کے فیصلے کو جلد بازی قرار دیتے ہوئے کہاکہ بابراعظم کے کندھوں پر بھاری ذمہ داری ڈالنے کے بجائے ان کو پہلے گروم کیا جانا چاہیے تھا۔

تفصیلات کے مطابق جاوید میانداد نے کہا کہ بابراعظم نوجوان بلے باز ہیں جنہیں قیادت کا کوئی تجربہ نہیں ہے اور اس ذمہ داری کے باعث ان کی بیٹنگ میں کارکردگی بھی متاثر ہو سکتی ہے۔ سابق کپتان نے کہا کہ سرفراز احمد کو کم ازکم مشکل دورہ آسٹریلیا تک کپتان برقرار رکھتے ہوئے بابر اعظم کو بطور نائب تجربہ دلانا چاہیے تھا۔

انہوں نے کہا کہ اگرچہ سرفراز احمد کی بطور بلے باز کارکردگی متاثر ہوئی لیکن وہ ایک بہترین وکٹ کیپر ہیں اور بورڈ کو چاہئے تھا کہ انہیں فارم کی بحالی کیلئے مزید وقت دیتا۔ جاوید میانداد نے کہا کہ پی سی بی نے تینوں فارمیٹ کیلئے ہیڈکوچ اور چیف سلیکٹر مقرر کرکے مصباح الحق پر دہری ذمہ داریوں کا زیادہ ہی بوجھ ڈال دیا ہے،قومی ٹیم کو اس وقت بیٹنگ کوچ کی اشد ضرورت ہے۔

مزید : کھیل