ہریانہ اور مہاراشٹرا میں انتخابی ریلیوں میں پاکستان پر بے بنیاد الزامات  عائد کیے جارہے ہیں:ترجمان دفتر خارجہ

 ہریانہ اور مہاراشٹرا میں انتخابی ریلیوں میں پاکستان پر بے بنیاد الزامات  ...
 ہریانہ اور مہاراشٹرا میں انتخابی ریلیوں میں پاکستان پر بے بنیاد الزامات  عائد کیے جارہے ہیں:ترجمان دفتر خارجہ

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) ترجمان دفتر خارجہ نے کہا ہے کہ ہریانہ اور مہاراشٹرا میں انتخابی ریلیوں میں پاکستان پر بے بنیاد الزامات  عائد کیے جارہے ہیں، پاکستانی دریاؤں  کاپانی روکنے کی دھمکیاں دی جاری ہیں، کرتارپور راہداری کھولنے کے پا کستان کے تاریخی فیصلے کا کریڈٹ  لینے کی کوشش کی جارہی ہے ۔

اپنے ایک بیان میں  ترجمان نے مزید کہاکہ پاکستان الزامات دھمکیوں اورتاریخی حقائق مسخ کرنے کو مسترد کرتا ہے،سیاسی فائدے کیلئے پاکستان کا نام استعمال کرنے  کا سلسلہ بند ہونا چاہیے ،کیا بی جے پی کے پاس پاکستان دشمنی کے علاوہ کچھ اور ہے؟ بی جے پی  کی قیادت کی جانب سے انتخابی مہم میں پاکستان مخالف پروپیگنڈا کیا جارہا ہے۔

یاد رہے کہ اس سے قبل سرسا میں انتخابی جلسے میںہندوستانی وزیر اعظم نریندر مودی نے ایک بار پھر پاکستان پر بے بنیاد الزام تراشی اور ارضِ پاک  کا پانی بند کرنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا تھا  کہ’’ہم پاکستان کو پانی جانے نہیں دیں گےاور وہاں سے نشہ کو بھارت میں آنے نہیں دیں گے،ہندوستان کے پانی سے پاکستان کے کھیت لہلہائیں اور بھارتی کسان کے کھیت خشک رہیں یہ نہیں چلےگا، پاکستان ہندوستان میں نشہ بھیج کر نوجوانوں کے مستقبل کو تباہ کرنا چاہتا ہے لیکن ہماری حکومت ایسا کسی صورت نہیں ہونے دے گی ۔بھارتی وزیراعظم نریندر مودی نے کہا کہ گرو نانک دیو جی کی 550 ویں یوم پیدائش تہوارکی تیاری چل رہی ہے، ہند پاک تقسیم کے بعد ہمارے لوگ کرتارپورصاحب کا دوربین سے دیدارکرتے رہے،کانگریس کی حکومت اس چار کلومیٹر کے فاصلے کو دور نہیں کر سکی لیکن بی جے پی حکومت کوریڈور تعمیر کرکے اس فاصلے کو ختم کر رہی ہے۔

مزید : قومی