نیب کا شہباز شریف کیخلاف صاف پانی انکوائری بند کرنے کا فیصلہ 

نیب کا شہباز شریف کیخلاف صاف پانی انکوائری بند کرنے کا فیصلہ 

  

 لاہور(جنرل رپورٹر)نیب نے صاف پانی کرپشن انکوائری بند کرنے کا فیصلہ کر لیا۔ذرائع کے مطابق نیب لاہور نے انکوائری بند کرنے کے لیے چیئرمین نیب سے منظوری مانگ لی ہے۔ چیئرمین نیب کو پیش کردہ سفارشات میں کہا گیا ہے کہ پنجاب پروکیورمنٹ رولز 2014 کی شق 45 کی سب شق 5 کی خلاف ورزی کی گئی ہے اور ای سی ایس پی اور اربن یونٹ کو غیر ملکی فرمز کے ساتھ مل کر کنٹریکٹ دئیے گئے تاہم پیرا رولز 2014 غیر ملکی یا پرائیویٹ فرمز کا حکومتی کمپنیوں سے ایسوسی ایشن پر خاموش ہے نیب انکوائری میں کہا گیا کہ غیر ملکی کمپنیوں کو 19 کروڑ 59 لاکھ 70 ہزار کی رقم ادا کی گئی جبکہ صاف پانی جنوبی پنجاب آفس 2 سال کے لیے کرائے پر دیا گیا اور کرائے کی مد میں 6 کروڑ 48 لاکھ 29 ہزار کی رقم دا کی گئی ڈی جی نیب لاہور کہتے ہیں کیس ابھی چل رہا ہے اور دیکھتے ہیں آخر میں کیا ہوتا ہے۔ واضح رہے کہ اس کیس میں سابق وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف ان کے صاحبزادے حمزہ شہباز اور سابق وزیر خزانہ عائشہ غوث  سابق چیف ایگزیکٹو واٹر اتھارٹی  ڈاکٹر وسیم کو ملزم بنایا گیا تھا۔

صاف پانی انکوائری 

مزید :

صفحہ اول -