کیپٹن (ر) صفدر کی گرفتاری نہیں جرم دیکھا جائے، مریم نواز کا موقف جھوٹ 

کیپٹن (ر) صفدر کی گرفتاری نہیں جرم دیکھا جائے، مریم نواز کا موقف جھوٹ 

  

 پشاور،کراچی، اسلام آباد، راولپنڈی(سٹاف رپورٹرز،نیوز ایجنسیاں) وفاقی وزیراطلاعات ونشریات سینیٹرشبلی فراز نے کہا ہے کیپٹن(ر)صفدرکوکس نے گرفتارکیا اسے بھول جائیں، ان کا جرم دیکھا جائے۔ پشاورمیں صوبائی وز یرشوکت یوسفزئی کے ہمراہ پریس کانفرنس کے دوران شبلی فراز نے کہا حکومت اپوزیشن کی جلسیوں سے خوفزدہ نہیں، جواب دینا ہمارا فرض ہے تاکہ صورتحال واضح رہے، بنارسی ٹھگو ں کے ٹولے کا مقصد پاکستان کوپیچھے دھکیلنا ہے، یہ عناصراپنی لوٹ مار اور کرپشن کا تحفظ چاہتے ہیں، یہ کاروباری لوگ تھے انہوں نے اپنی سہولت کے مطابق نظام چلایا، ذاتی مفادات کیلئے ملکی وسائل کو لوٹا،پہلے اداروں کو مفلوج پھر انہیں بتدریج تباہ کیا۔ شبلی فرازکا کہنا تھا جس اسمبلی کو مولانا فضل الرحمان نے جعلی کی رٹ لگا رکھی ہے اسی سے صدربننے کی کوشش کی، طویل عرصہ چیئرمین کشمیرکمیٹی رہے۔ ایک نوسربازخود کو بیمار بنا کرملک سے باہرچلا گیا، مگرقانون سے بالاتر نہیں، واپس آکر جواب دے، نوازشریف کی واپسی کیلئے حکومت اقدامات کریگی، قائداعظمؒ کے مزار پر ہلڑبازی کوئی برداشت نہیں کرسکتا، کیپٹن  (ر)صفدرنے پاکستان اورعوام کی توہین کی اسلئے گرفتا ر ہوا، اسکا سیاست سے کوئی تعلق نہیں۔ادھر وفاقی وزیر بحری امور علی زیدی نے کہا مریم نواز پھرجھوٹ بول رہی ہیں کہ ہوٹل کا دروازہ توڑا گیا۔ مزارِقائد ؒکی بیحرمتی کرنیوالے اوباشوں کیخلاف آئی جی سندھ کی فوری کارروائی قابل تحسین ہے، ویڈیو اس کے برعکس ہے، کوئی ہتھکڑی دکھائی دے رہی ہے نہ زبردستی گرفتار ی۔ قوم کرپٹ سیاستدانوں کو مزید برداشت نہیں کریگی۔دوسری جانب وزیر اعظم کے مشیر احتساب و داخلہ بیرسٹر شہزاد اکبر نے کیپٹن (ر) صفدرکی گرفتاری پر مریم نواز سے سوال کیا کہ مریم نواز سندھ پولیس آپکے حلیف بلاو ل بھٹو زرداری کے براہ راست کنٹرول میں ہے۔ آپکے شوہر کی گرفتاری آپ اور آپکے نئے اتحادی نے پبلسٹی اسٹنٹ کی خاطر کروائی، یا آپ ایک دوسرے کیخلاف کام کر رہے ہیں، بتائیں ان میں کون سی بات سچ ہے؟۔دریں اثناء وفاقی وزیر سائنس و ٹیکنالوجی فواد چودھری نے کیپٹن(ر)صفدر کی گرفتاری کو قانون کے احترام کا بیانیہ قرار دیتے ہوئے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے بیان میں کہا قائداعظمؒ کا مزار کم ظرف سیاسی قیادت کے کھیل کا میدان نہیں مقدس جگہ ہے۔ غیر سنجیدہ طرز عمل قانون پر سزا ہونی چاہیے۔ادھر چیئرمین کشمیرکمیٹی شہریار آفریدی نے کہا اتوار کواپوزیشن رہنماؤں نے کراچی جلسے میں مسئلہ کشمیر پر سیاست چمکائی،اپنے ادوار حکومت میں انہوں نے مسئلہ کشمیر کو اجاگر کرنے کیلئے کچھ نہیں کیا جبکہ پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ (ن) نے فضل الرحمان کو کشمیر کمیٹی کا چیئرمین بنائے رکھا۔ وزیراعظم عمران خان کشمیریوں کے وکیل بن کر مقدمہ لڑ رہے ہیں،اپوزیشن کی جانب سے قومی اداروں کو نشانہ بنانا دشمن کا ایجنڈا ہے۔ اپوزیشن کا مقصد سینیٹ الیکشن کا التوء اور دباؤ کے ذریعے این آر او لینا ہے۔جبکہ وفاقی وزیر ہوا بازی غلام سرور خان نے کہا پی ڈی ایم جلسے میں 11جماعتوں کے رہنما موجود تھے افسوس پاک فوج پر حملے کی مذمت تک نہ کی گئی۔یہ کھاتے پاکستان کا، لوٹتے پاکستان کو اور کام پاکستان کیخلاف کرتے ہیں۔ہماری مسلح افواج پاکستان اورعوام کی محافظ ہیں، فوج کیخلاف بات کرتے ہوئے انہیں شرم آنی چاہیے، ففتھ جنریشن وار یہی ہے کہ اداروں کیخلاف جنگ کی جائے، یہود و ہنود کا ایجنڈا ہے پاکستان میں اداروں کو اداروں سے لڑایا جائے۔

وزراء معاونین

مزید :

صفحہ اول -