سیاسی کارکن مزارقائد ؒ پر عزم کا اعادہ نہیں کریگا تو کہاں کریگا؟

سیاسی کارکن مزارقائد ؒ پر عزم کا اعادہ نہیں کریگا تو کہاں کریگا؟

  

اے این پی کے مرکزی رہنما میاں افتخار حسین نے کہا کہ یہ سوشل میڈیا کا دور ہے اور اس میں کوئی بھی بات چھپی نہیں رہتی آج ہی سوشل میڈ یا پر ایک ویڈیو وائرل ہوئی ہے جس میں موجودہ وزیراعظم عمران خان جب مزار قائد ؒپر گئے تھے اور اس وقت ان کی موجودگی میں جو بد نظمی اور جو سیاسی نعرے لگائے گئے تھے ان پر بھی تبدیلی سرکار کو زرا غور کر لینا چاہئے اور اپنے گریبان میں بھی جھانک لینا چاہئے۔وہ ایشو آف دی ڈے میں اظہار خیال کررہے تھے،انہوں نے کہا کہ بانی پاکستان قائد اعظم محمد علی جناح ؒکے مزار پر جا کر سیاسی کارکن اپنی سیاسی جدوجہد تیز کرنے کے عزم کااعادہ نہیں کریں گے تو پھر کہاں جا کر کریں گے۔انہوں نے کہا کہ ایک سیاسی کارکن جب مزار قائدؒ پر جائیگا تو تب ہی اس کو اس بات کا پتہ چلے گا یہ ہے وہ قائد ؒجن کی عظیم سیاسی جدوجہد کی بدولت ہم ایک آزاد اور خود مختار پاکستان حاصل کرنے میں کامیاب ہوئے تھے،کیپٹن (ر) صفدر والا ایشو کوئی ایسا ایشو نہیں کہ جس کو ایشو بنایا جارہا ہے،اصل میں حکومت کی کوشش اپوزیشن اتحاد میں دراڑ ڈالنا اور اس کی بنیاد رکھنے کیلئے کیپٹن (ر) صفدر پر مقدمہ بنایا گیا جس کی ہم مذمت کرتے ہیں۔ 

 میاں افتخار

مزید :

صفحہ اول -