قتل یا خودکشی، خاتون کی گارڈر سے لٹکی لاش برآمد

  قتل یا خودکشی، خاتون کی گارڈر سے لٹکی لاش برآمد

  

 شاہجمال(نمائندہ پاکستان) تین بچوں کی ماں کی گارڈر سے لٹکی نعش برآمد ہوئی شوہر اور والد کے مطابق خاتون نے خود کشی کی وہ کوئی کاروائی نہیں کرانا چاہتے پولیس نے لاش قبضہ میں لیکر ضروری قانونی کاروائی شروع کر دی پولیس کو 15پر اطلاع ملی کہ بیٹ میتلا میں ایک خاتون قتل ہو چکی ہے پولیس موقع پر پہنچی تو متوفیہ کے والد رشید احمد میرانی نے بتایا کہ اسکی بیٹی شمشاد بی بی کی دوسری شادی امیر بخش سے عرصہ بارہ سال قبل ہوئی جس سے اس کے تین بچے ہیں جبکہ اسکی (بقیہ نمبر60صفحہ7پر)

پہلی بیوی شمیم بی بی بھی ان کے ہمراہ رہائش پذیر ہے صبح سویرے چھوٹیبچے  کمرے سے گنا لینے گئے تو دیکھا کہ شمشاد بی بی کی نعش گارڈر سے لٹکی ہوئی ہے فوری طور پر اسکا شوہر اور اسکی سوکن وہاں پہنچے تو شمشاد کی نعش رومال سے لٹکی ہوئی تھی دونوں نے ملکر اتارا وہ بیٹوں اور دیگر اہل علاقہ  کے ہمراہ وہاں پہنچا تو دیکھا اس کی تین بچوں کی ماں بیٹی جاں بحق ہو چکی ہے اور ہمہ قسم تسلی کر لی ہے کہ اسکی بیٹی نے گھریلو جھگڑے پرخود کشی کی ہے کسی نے اسیقتل نہیں کیا وہ کسی قسم کی کاروائی نہیں کرنا چاہتا،پولیس نے نعش قبضہ میں لیکر ضروری قانونی کاروائی شروع کر دی ہے دوسرے واقعہ میں ہیڈ 76کی شائستہ نے زہر پی لیا جسے ورثا ہسپتال لائے ریفر کئیے جانے پر وہ اپنی مرضی سے علاج کروائے بغیر گھر لے گئے۔

لاش برآمد

مزید :

ملتان صفحہ آخر -