”ہوٹل کا دروازہ پولیس نہیں توڑ سکتی تھی ٹھڈے وہی تھے جو ۔۔“کیپٹن صفدر رہائی ملنے کے بعد بول پڑے 

”ہوٹل کا دروازہ پولیس نہیں توڑ سکتی تھی ٹھڈے وہی تھے جو ۔۔“کیپٹن صفدر رہائی ...
”ہوٹل کا دروازہ پولیس نہیں توڑ سکتی تھی ٹھڈے وہی تھے جو ۔۔“کیپٹن صفدر رہائی ملنے کے بعد بول پڑے 

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن )کیپٹن صفدر کو گزشتہ روز مزار قائد کے تقدس کی پامالی کے الزام میں کراچی میں گرفتار کیا گیا تھا تاہم شام کو عدالت نے ان کی ضمانت منظور کر لی اور وہ مریم نواز کے ہمراہ لاہورپہنچ گئے ۔

کیپٹن صفدر نے اس تمام صورتحال پر اب لب کشائی کی ہے اور میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ” ہوٹل کا دروازہ پولیس نہیں توڑ سکتی ، ٹھڈے وہی تھے جو آئیں کو پڑتے آ رہے ہیں ، مزار قائد پر مجھے مراقبہ کی کیفیت ہوئی ، مجھے محسوس ہوا جیسے میری باتیں سن رہے ہیں ، میں کہا کہ باباآپ کا پاکستان مشکل میں ہے ،میں بابائے قوم کو حاضر کرکے اللہ سے استدعا کی اور نعرہ لگایا ،پھر میں نے مادر ملت زندہ باد کہا ،اس میں غلط کام کیا ہے ؟ہر 18 اکتوبر کو مزار پر جا کر مادر ملت زندہ باد کہوں گا،ماں کو زندہ باد کہنا اور استدعا کرنا جرم ہے تو جرم کر تے رہیں گے ۔

یاد رہے کہ کیپٹن صفدر کو کراچی کے مقامی ہوٹل سے صبح سویرے پولیس نے چھاپہ مار کر گرفتار کر لیا تھا جس کی اطلاع مریم نواز نے خود ٹویٹر پر جاری پیغام میں دی اور کہا کہ پولیس اہلکاروں نے کمرے کا دروازہ توڑ کر انہیں گرفتار کیا جبکہ کیپٹن صفدر کہہ رہے تھے میں ادویات اٹھا لوں اور خود باہر آ رہاہوں اور آپ کے ساتھ چلتاہوں ، مریم نواز کا موقف تھا کہ جس وقت پولیس والے دروازہ توڑ کر اندر داخل ہوئے تو وہ بھی وہیں موجود تھیں ۔

مزید :

قومی -