’ اپنی درخواستیں 10 دن کیلئے واپس لے لو‘ آئی جی سندھ نے چھٹی کی درخواست واپس لیتے ہوئے افسران کو بھی حکم دے دیا

’ اپنی درخواستیں 10 دن کیلئے واپس لے لو‘ آئی جی سندھ نے چھٹی کی درخواست واپس ...
’ اپنی درخواستیں 10 دن کیلئے واپس لے لو‘ آئی جی سندھ نے چھٹی کی درخواست واپس لیتے ہوئے افسران کو بھی حکم دے دیا

  

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن) آئی جی سندھ مشتاق مہر نے مشروط طور پر اپنی چھٹی کی درخواست واپس لے لی اور ساتھ ہی پولیس افسران سے بھی کہا ہے کہ وہ انکوائری کمیٹی کے فیصلے تک 10 روز کیلئے چھٹی کی درخواستیں واپس لے لیں۔

سندھ پولیس کے ٹوئٹر پر جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ 18 اور 19 اکتوبر کی درمیانی شب پیش آنے والے واقعے نے سندھ پولیس کے تمام رینکس کو دل شکستہ اور ناراض کیا۔ اس کے نتیجے میں آئی جی سندھ نے فیصلہ کیا کہ چھٹیاں لے لی جائیں، اس کے بعد تمام رینکس نے فیصلہ کیا کہ وہ بھی سندھ پولیس کی توہین پر بطور احتجاج چھٹیاں لیں گے۔ یہ ایک اپنی مرضی سے دیا گیا رد عمل تھا، ہر شخص نے انفرادی طور پر فیصلہ کیا، یہ اجتماعی فیصلہ نہیں تھا۔ ہر کسی نے شخصی طور پر چھٹیوں پر جانے کا فیصلہ اس لیے کیا کیونکہ ڈیپارٹمنٹ کے ہر فرد نے بے عزتی محسوس کی تھی۔

بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ سندھ پولیس آرمی چیف کی شکر گزار ہے کہ انہوں نے ایک یونیفارم فورس کو پہنچنے والی تکلیف کا احساس کیا اور فوری طور پر اس معاملے پر انکوائری کا حکم دیا۔ انہوں نے اس بات کی بھی یقین دہانی کرائی ہے کہ سندھ پولیس کی عزت بھی بحال کی جائے گی۔سندھ پولیس چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری اور معزز وزیر اعلیٰ کی بھی شکر گزار ہے کہ وہ آئی جی ہاؤس آئے اور پولیس کی قیادت کے ساتھ یکجہتی کا اظہار کیا۔

سندھ پولیس ہمیشہ سے ہی ایک ڈسپلن فورس رہی ہے جو اس بات پر یقین رکھتی ہے کہ تمام اہم قومی اداروں کے مابین باہمی تعاون ہونا چاہیے تاکہ صوبے کے لوگوں کی خدمت کی جاسکے۔ اسی لیے آئی جی سندھ نے فیصلہ کیا ہے کہ وہ اپنی چھٹیوں کا فیصلہ موخر کردیں گے ، انہوں نے اپنے افسران کو بھی حکم دیا ہے کہ وہ 10 روز کیلئے جب تک انکوائری کا فیصلہ نہیں آتا وسیع تر قومی مفاد میں اپنی چھٹیوں کی درخواستیں واپس لے لیں۔

مزید :

Breaking News -اہم خبریں -قومی -