مستحقین کے حق پر ڈاکہ

مستحقین کے حق پر ڈاکہ

  

میڈیا رپورٹس کے مطابق جنوبی پنجاب کے تین ڈویژنز میں بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام اور احساس کفالت پروگرام کی امدادی رقوم میں مبینہ کٹوتیاں ہو رہی ہیں جس پر مستحق خواتین سراپا احتجاج ہیں کہ ریٹیلرز نے مرد و خواتین ایجنٹ بنا رکھے ہیں جو فی کارڈ 1000 سے 1500 روپے وصول کرتے ہیں اور جو خواتین پیسے نہ دیں انہیں مختلف حیلے بہانوں سے تنگ کیا جاتا ہے کہ آپ کل آئیں، آپ کا انگوٹھا میچ نہیں ہورہا،کیش ختم ہو گیا یا پھر لنک ڈاون کا کہا جاتا ہے اور جو خواتین ایجنٹ لے کر آئیں یاکٹوتی کرانے پر رضا مند ہوں انہیں فوری ادائیگی کر دی جاتی ہے۔ بینکوں اور اے ٹی ایم مشینوں پر بھی خواتین کا رش دکھائی دیتا ہے وہاں پر بھی سادہ لوح خواتین کے ساتھ فراڈ کی شکایات موصول ہو رہی ہیں۔ ایف آئی اے نے مختلف شکایات پر کارروائیاں بھی کیں،لوٹ مار کا سلسلہ اس کے باوجود بھی جاری  ہے۔وفاقی و صوبائی حکومت کو چاہیے کہ وہ امدادی رقوم کی ادائیگی کے حوالے سے موثر آگاہی مہم چلائے اور کٹوتی کرنے والے ریٹیلزز اور ایجنٹوں کے خلاف سخت کارروائی عمل میں لائے تاکہ مستحق و بے سہارا خواتین کو حکومت کی طرف سے ملنے والی امدادی رقوم بنا کٹوتی مل سکیں۔

مزید :

رائے -اداریہ -