چیئر مین این آئی آر سی اور ممبران کی تعیناتی سے متعلق حکومتی جواب مسترد 

چیئر مین این آئی آر سی اور ممبران کی تعیناتی سے متعلق حکومتی جواب مسترد 

  

لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہور ہائی کورٹ نے چیئر مین قومی صنعتی تعلقات کمشن (این آئی آر سی) اور ممبران کی تعیناتی سے متعلق درخواست پروفاقی حکومت کامبہم جواب مسترد کرتے ہوئے چیئرمین آئی آر سی اور ممبران کی فوری تعینات کاٹائم فریم آئندہ سماعت پر طلب کرلیاہے،دوران سماعت ڈپٹی اٹارنی جنرل ناصر گھمن نے عدالت کوبتایا کہ چیئرمین اور ممبران کی تعیناتی کیلئے سفارشات بھیجی گئی ہیں،عدالت نے قراردیا کہ عدالت کو سفارشات سے غرض نہیں ٹائم فریم فوری طور پر عدالت میں پیش کیاجائے،درخواست گزار کا موقف ہے کہ این آئی آرسی ادارہ مزدوروں کی شکایات کے ازالے کے لئے قائم کیاگیا،گزشتہ پانچ برسوں سے اس ادارے میں ججز ہی تعینات نہیں کئے گئے،ججوں کی عدم تعیناتی سے مزدوروں کی 5ہزار درخواستیں زیرالتواء ہیں،آئین پاکستان کے تحت ہرشہری کو شفاف ٹرائل اور انصاف کی فوری فراہمی کا حق حاصل ہے، مزدوروں کی شکایات کے ازالے کا واحد فورم غیر فعال ہونے سے انہیں شدید مشکلات کا سامنا ہے،ججوں کی عدم تعیناتیوں سے صنعتوں میں کام کرنے والے مزدور بے آسرا ہوچکے ہیں،مزدور صنعتوں میں استحصال پرکسی فورم سے رجوع نہیں کرسکتے،عدالت سے استدعاہے کہ این آئی آر سی کے چیئرمین اور ممبران کی فوری تعیناتی کاحکم دیاجائے۔

جواب مسترد 

مزید :

صفحہ آخر -