عوام کو شفاف اور آسان طریقے کے تحت خدمات کی فراہمی کیلئے کوشاں ہے: محمود خان 

عوام کو شفاف اور آسان طریقے کے تحت خدمات کی فراہمی کیلئے کوشاں ہے: محمود خان 

  

      پشاور(سٹاف رپورٹر)وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا محمود خان نے صوبے میں ای۔اسٹامپ پیپر کا باضابطہ اجراء کیا ہے اور کہا ہے کہ یہ صوبائی حکومت کا ای گورننس کی جانب ایک اور انقلابی قدم ہے جس کے ذریعے پرانی تاریخوں میں اسٹامپ پیپر کے اجراء کا سلسلہ بند ہو جائیگا اور جائیداد کی خرید و فروخت کے تنازعات کے تدارک، جعلسازی و دھوکہ دہی کے خاتمے اور جائیداد کے صحیح قیمت کے تعین میں بھی مدد ملے گی۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ صوبائی حکومت عوام کو شفاف اور آسان طریقے کے تحت خدمات کی فراہمی کیلئے کوشاں ہے اور اس سلسلے میں متعدد اقدامات کئے جاچکے ہیں۔ ای سٹامپ پیپر کا اجراء بھی اسی سلسلے کی ایک کڑی ہے جس کی وجہ سے وقت اور وسائل دونوں کی بچت ہوگی اور عوام کو اسٹامپ پیپر کی حصول اور تصدیق وغیرہ کے امور میں خاطر خواہ سہولت میسر آئے گی۔ وزیراعلیٰ نے بدھ کے روز وزیراعلیٰ ہاؤس میں ای۔اسٹامپ پیپر کے باضابطہ اجراء کیلئے منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ میرٹ، شفافیت اور عوام کو ان کی دہلیز پر سہولیات کی فراہمی صوبائی حکومت کے ایجنڈے میں سرفہرست ہیں۔ یہی وجہ ہے کہ صوبائی حکومت صوبے میں ای گورننس کے فروغ کیلئے کوشاں ہے۔ انہوں نے کہا کہ وہ چیئرمین پی ٹی آئی کے وژن کے مطابق براہ راست عوام پر سرمایہ کاری کرنے پر یقین رکھتے ہیں اور اس سلسلے میں متعدد عملی اقدامات اٹھائے گئے ہیں جن میں صوبہ بھرمیں سروسز ڈیلیوری سنٹرز کا قیام، صحت کارڈ اسکیم کی سو فیصد آبادی تک توسیع، کسان کارڈ کا اجراء، ای ٹینڈرنگ، ای بڈنگ اور ای پیمنٹ جیسے اقدامات بڑی اہمیت کے حامل ہیں۔ قبل ازیں تقریب کے شرکاء کو ای۔اسٹامپ پیپر کی تفصیلات سے آگاہ کرتے ہوئے بتایا گیا کہ بنیادی طور پر ایک ہزار روپے سے زائد مالیت کے ای۔اسٹامپ پیپر کا اجراء کیا جارہا ہے جس کیلئے باضابطہ طور پر ویب سائٹ www.estamp.kp.gov.pk  تیار کی گئی ہے۔اسٹامپ پیپر کی تصدیق بھی مذکورہ ویب سائٹ کے ذریعے آن لائن کی جاسکے گی۔ پہلے مرحلے میں ضلع نوشہرہ سے بطور پائلٹ پروجیکٹ ای۔اسٹامپ پیپر کے اجراء کا سلسلہ شروع ہے جس کے ایک ماہ بعد اس اقدام کو دیگر ڈویژنز میں منتخب اضلاع تک توسیع دی جائے گی جبکہ رواں مالی سال کے اختتام تک پورے صوبے میں ای۔اسٹامپ پیپر کااجراء یقینی بنایا جائیگا۔ اس نئے نظام کے تحت تمام اضلاع کیلئے ویلوویشن ٹیبل کا یکساں فارمیٹ وضع کیا گیا ہے۔ ای۔اسٹامپ پیپر کے اقدام کو باقاعدہ قانونی حیثیت دینے کیلئے اسٹامپ ایکٹ 1899 میں ضروری ترامیم کی گئی ہیں۔ ای۔اسٹامپ پیپر کے اجراء سے محکمہ کو سالانہ 50 کروڑ روپے تک کی بچت ہوگی۔ وزیراعلیٰ کے معاون خصوصی برائے ریونیو اینڈ اسٹیٹ تاج محمد ترند اور سینئر ممبر بورڈ آف ریونیو ذاکر حسین آفریدی نے بھی تقریب سے خطاب کیا جبکہ معاون خصوصی برائے اطلاعات بیرسٹر محمد علی سیف کے علاوہ متعلقہ محکموں کے اعلیٰ حکام اور شراکت دار اداروں کے نمائندوں نے تقریب میں شرکت کی۔ 

مزید :

صفحہ اول -