ایک ہزار کروڑروپے کا گھپلہ، تحقیقات سے بچنے کیلئے بھارت کے 2افسران ملک سے ہی فرار ہوگئے

ایک ہزار کروڑروپے کا گھپلہ، تحقیقات سے بچنے کیلئے بھارت کے 2افسران ملک سے ہی ...
ایک ہزار کروڑروپے کا گھپلہ، تحقیقات سے بچنے کیلئے بھارت کے 2افسران ملک سے ہی فرار ہوگئے

  

چندی گڑھ(مانیٹرنگ ڈیسک) بھارتی ریاست پنجاب کے محکمہ آبپاشی میں ہونے والے 1ہزار کروڑ روپے کے گھپلوں کی تحقیقات سے بچنے کے لیے دو سابق انڈین ایڈمنٹریٹو سروسز (آئی اے ایس) آفیسرز ملک سے فرار ہو گئے۔انڈیا ٹائمز کے مطابق یہ ریٹائرڈ آفیسرز سابق چیف سیکرٹری سرویش کوشل اور سابق سپیشل چیف سیکرٹری کے بی ایس سدھو ہیں، جن پر اریگیشن ڈیپارٹمنٹ میں 10ارب روپے کی کرپشن میں ملوث ہونے کا الزام ہے۔

پنجاب پولیس کے اعلیٰ سطحی ذرائع نے بتایا ہے کہ دونوں سابق آفیسرز بھارت سے فرار ہو کر امریکہ جا چکے ہیں۔ ان کے خلاف پنجاب ویجیلنس بیورو(وی بی) تحقیقات کر رہی ہے۔ یہ دونوں اپنے خلاف ’لُک آﺅٹ سرکلرز‘ جاری ہونے سے چند دن پہلے بھارت سے فرار ہوئے۔

فرار ہو کر امریکہ جانے والے دونوں سابق افسران کے بیٹے امریکہ میں مقیم ہیں اور گرین کارڈ ہولڈر ہیں۔ اس گھپلے میں ملوث تیسرا سابق آئی اے ایس آفیسر کاہن سنگھ پنوں ملک میں موجود ہے اور تحقیقات میں تعاون کر رہا ہے۔ کاہن سنگھ پنوں اریگیشن ڈیپارٹمنٹ میں سیکرٹری کے عہدے پر رہ چکا ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -