ایل این جی ایران اور تاپی گیس سے سستی ہے، سالانہ 100 ارب کی بچت ہوگی: وزیر پٹرولیم

ایل این جی ایران اور تاپی گیس سے سستی ہے، سالانہ 100 ارب کی بچت ہوگی: وزیر ...
ایل این جی ایران اور تاپی گیس سے سستی ہے، سالانہ 100 ارب کی بچت ہوگی: وزیر پٹرولیم

  

اسلام آباد (ویب ڈیسک) وفاقی وزیر پٹرولیم شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ ایل این جی کیخلاف آئل مافیا متحرک ہوگیا ہے، ایک طرف ایل این جی ٹرمینل لگانے پر دھمکیاں دی جارہی ہیں، دوسری طرف یہ کام نہ کرنے کے بدلے پیسوں کا لالچ دے رہے ہیں۔ یہاں پریس بریفنگ میں وفاقی وزیر نے بتایا کہ ایل این جی منصوبے کے پیچھے سیف الرحمان کا کوئی ہاتھ نہیں ہے، پیپرا رولز سستی ایل این جی کی راہ میں رکاوٹ ہیں، اس سوال پر اگر پیپرارولز سستی ایل این جی کی راہ میں رکاوٹ ہیں تو کیا ایم ڈی پی ایس او کی تعیناتی کیلئے کوئی پیپرا رولز نہیں ہیں۔ 

وفاقی وزیر نے جواب دیا کہ ایم ڈی پی ایس او عمران شیخ کو میں نے تعینات نہیں کیاجنہوں نے اس کو تعینات کیا ہے اس سے پوچھا جائے، عمران شیخ انجینئر ہیں جب اس نے ایم ڈی پی ایس او کیلئے اپلائی کیا تو میں نے فون کرکے ان سے پوچھا کہ کیا آپ نے سنجیدگی سے اپلائی کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ قطر نے ہمیں کہا ہے کہ ایل این جی ضرور خریدیں لیکن میں بدنام نہ کریں، ایل این جی امپورٹ سے سالانہ 100 ارب کی بچت ہوگی، ایل این جی تاپی اور ایران گیس سے سستی ہوگی، اوگرا کی جانب سے ایل این جی کی قیمت متقرر نہ ہونے کی وجہ سے قطر سے معاہدہ طے نہیں پارہا ہے۔

مزید : اسلام آباد