چوہنگ،سسرال میں تشدد کا شکارمتوفی نادیہ کی خود کشی کا معمہ حل نہ ہو سکا

چوہنگ،سسرال میں تشدد کا شکارمتوفی نادیہ کی خود کشی کا معمہ حل نہ ہو سکا

لاہور(کرائم سیل)چوہنگ کے علاقہ میں 4بچوں کی ماں کامبینہ طور پر پنکھے کیساتھ لٹک کر خو دکشی کرنے کا معمہ حل نہ ہوسکا جبکہ متوفیہ کے والد نے الزام عائد کیا ہے کہ میرے بیٹی کو اسکے خاوند نے قتل کیا ہے ۔تاہم پولیس مختلف پہلوؤں پر مصروف تفتیش ہے ۔ تفصیلات کے مطابق چوہنگ کے علاقہ دین ٹاؤن میں رہائش پذیر نادیہ کا اپنے خاوند ادریس سے اکثر لڑائی جھگڑا ہوتا رہتا تھا جمعہ کے رو ز انکا کسی بات پر جھگڑا ہوا جس پر نادیہ نے مبینہ طور پر گلے میں پھند ڈال لیا اور پنکھے کیساتھ جھول گئی ، اہلخانہ نے نادیہ کی پنکھے کیساتھ لٹکتی لاش دیکھ کر پولیس کو اطلاع کی پولیس نے لاش کو اتار کرجائے وقوعہ سے شواہد اکھٹے کرکے لاش کو پوسٹ مارٹم کے لیے مردہ خانہ میں جمع کروا دیاتھا ۔ خاتون کے والد نذیر کا کہنا ہے میری بیٹی کو اسکے خاوند ادریس نے اپنے گھر والوں سے مل کر پھند ا دیکر قتل کیا ہے ، اس سے قبل بھی اسکے خاوند اور گھر والوں نے بیٹی کو زندہ جلانے کی کوشش کی تھی جو گھر سے بھاگ کر والدین کے گھر پہنچ گئی تھی لیکن باوجود پولیس نے ملزم کے خلاف کوئی کارووائی عمل میں نہیں لائی ۔ پولیس کا کہنا ہے کہ گزشتہ روز حراست میں لے لیا تھا جس سے تفتیش جاری ہے لیکن فرانزک رپورٹ آنے کے بعد اصل حقائق سامنے آئیں گے ۔

مزید : علاقائی