غیرقانونی کام میں ملوث انسپکٹرتنزلی کے بعد سفارش کاسہارالے کر دوبارہ عہدے پر براجمان ہوگیا: آفتاب اقبال

غیرقانونی کام میں ملوث انسپکٹرتنزلی کے بعد سفارش کاسہارالے کر دوبارہ عہدے ...
غیرقانونی کام میں ملوث انسپکٹرتنزلی کے بعد سفارش کاسہارالے کر دوبارہ عہدے پر براجمان ہوگیا: آفتاب اقبال

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان میں کرپٹ افراد کیخلاف آپریشن جاری ہے تاہم سفارش بھی اتناہی بڑا ناسور بن چکی ہے جتنی کہ کرپشن ، اسی ناسور کا سہارالے کر کرپشن اور غیرقانونی کاروبارمیں ملوث ہونے کی وجہ سے انسپکٹر سے اے ایس آئی تک تنزلی کے بعد پولیس اہلکار دوبارہ اپنے عہدے پر براجمان ہوگیا۔

سینئر صحافی آفتاب اقبال نے اپنے پروگرام میں انکشاف کیاکہ وفاقی پولیس کے ایک انسپکٹر (جس کا نام نہیں بتایاگیا) کرپشن اور شراب وغیرہ سے متعلق کاروبارمیں ملوث تھا اور شکایت کے بعد اسے انسپکٹرسے تنزلی کرکے سب انسپکٹر بنادیاگیالیکن کاروبار جوں کا توں جاری رہااور پھر اے ایس آئی بنادیاگیالیکن باز آنے کی بجائے مذکورہ پولیس افسر نے نیا روٹ اپنایااور ایک اعلیٰ شخصیت کو اپنے ساتھ ملاکر سفارش کرائی ، ایک مہینے میں ایسی گیدڑسنگھی سنگھائی کہ اسے محکمے کو بحال کرناپڑااور وہ آج بھی انسپکٹر کے عہدے پر براجمان ہے ۔

آفتاب اقبال کاکہناتھاکہ پاکستان میں پولیس ڈیپارٹمنٹ دنیا کا سب سے بدنصیب ڈیپارٹمنٹ ہے ،گوکہ محکمے میں بڑے اچھے لوگ بھی موجود ہیں لیکن اچھے اور بروں میں تمیز کریں تو برے لوگوں کی تعدادشاید زیادہ ہے ۔

مزید : اسلام آباد