دبئی کا نوجوان شہزادہ ام ھریر قبرستان میں سپرد خاک،اماراتی امراءسمیت ہزاروں افراد کی جنازے میں شرکت

دبئی کا نوجوان شہزادہ ام ھریر قبرستان میں سپرد خاک،اماراتی امراءسمیت ہزاروں ...
دبئی کا نوجوان شہزادہ ام ھریر قبرستان میں سپرد خاک،اماراتی امراءسمیت ہزاروں افراد کی جنازے میں شرکت

  

دبئی(آئی اےن پی )متحدہ عرب امارات کے نائب صدر اور حاکم دبئی الشیخ محمد بن راشد آلمکتوم کے گذشتہ روز حرکت قلب بند ہونے سے انتقال کر جانے والے نوجوان بیٹے الشیخ راشدبن محمد بن راشد کو ہزاروں سوگواروں کی موجودگی میں دبئی کے ام ھریر قبرستان میں سپرد خاک کردیا گیا ۔عرب نےوز کے مطابق راشد بن محمد بن راشد آل مکتوم کی نماز جنازہ کی امامت مرحوم کے والد اور حاکم دبئی الشیخ محمد بن راشد آل مکتوم نے خود کی۔ نماز جنازہ میں متحدہ عرب امارات کے ولی عہد اور مسلح افواج کے ڈپٹی کمانڈر ان چیف الشیخ محمد بن زاید آل نھیان سمیت کئی اہم سیاسی شخصیات نے شرکت کی۔خیال رہے کہ حاکم دبئی الشیخ محمد بن راشد کے جواں سال فرزند 34 سالہ راشد بن محمد بن راشد آل مکتوم ہفتے کو اچانک دل کا دور پڑنے سے خالق حقیقی سے جا ملے تھے۔ دبئی کے حکمران خاندان میں ہونے والی اس ناگہانی موت پر پورے ملک میں گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کیا گیا اور متحدہ عرب امارات کی حکومت نے ملک بھر میں تین روزہ سوگ کا اعلان کیا ہے۔نماز جنازہ میں عجمان کی سپریم کونسل کے رکن الشیخ حمید بن راشد النعیمی، الفجیرہ کی سپریم کونسل کے رکن الشیخ حمد بن محمد الشرقی، ام القیوین گورنری کی سپریم کونسل کے رکن الشیخ سعود بن راشد المعلا اور راس الخیمہ کے الشیخ سعود بن صقر القاسمی بھی شریک تھے۔نواجوان شہزادے کی نماز جنازہ میں شرکت کرنے والوں میں دبئی کے ولی عہد الشیخ حمدان بن محمد بن راشد آل مکتوم، نائب ولی عہد الشیخ حمدان بن راشد آل مکتوم، دبئی کے وزیر خزانہ اور نائب ولی عہد الشیخ متوکم بن محمد بن راشد آل مکتوم، شارجہ نے نائب حاکم الشیخ سلطان بن محمد بن سلطان القاسمی، عجمان کے نائب ولی عہد الشیخ عمار بن حمید النعیمی،الفجیرہ کے ولی عہد الشیخ حمد بن محمد الشرقی، الشیخ راشد بن سعود المعلا،الشیخ محمد بن سعود بن صقر القاسمی اور کئی وزراء اور حکومتی شخصیات شامل تھیں۔نماز جنازہ کو کندھا دینے والوں میں مرحوم کے دو بھائی الشیخ حمدان بن محمد،الشیخ مکتوم بن محمد اور متحدہ عرب امارات کے ولی عہد الشیخ محمد بن زاید بھی شامل تھے۔

مزید : بین الاقوامی