ستمبر کے گزرنے کے ساتھ ہی دنیا کا بھی خاتمہ؟ مذہبی رہنماءبھی میدان میں آ گئے، تہلکہ خیز پیشنگوئی کر ڈالی

ستمبر کے گزرنے کے ساتھ ہی دنیا کا بھی خاتمہ؟ مذہبی رہنماءبھی میدان میں آ گئے، ...
ستمبر کے گزرنے کے ساتھ ہی دنیا کا بھی خاتمہ؟ مذہبی رہنماءبھی میدان میں آ گئے، تہلکہ خیز پیشنگوئی کر ڈالی

  

واشنگٹن(مانیٹرنگ ڈیسک) چند عیسائی مذہبی رہنماﺅں کا دعویٰ ہے کہ ان کے مذہب میں قیامت کی نشانیاں واضح بیان کی گئی ہیں ۔ان علامات میں سے ایک یہ ہے کہ قیامت آنے سے قبل سورج کو تاریک اور چاند کو سرخ کر دیا جائے گا۔امریکی خلائی ادارے ناسا کی رپورٹ کے مطابق 28ستمبر کو چاند گرہن لگے گا اور اس وقت چاند کی رنگت سرخ ہو جائے گی، اسی وجہ سے اسے ”بلڈ مون“ بھی کہا جاتا ہے ۔برطانوی اخبار ’ڈیلی میل ‘کے مطابق اس چیز کو لے کر بعض عیسائی پاسٹر پیش گوئی کر رہے ہیں کہ 28ستمبر کو قیامت برپا ہو جائے گی۔

ایک موبائل ایپ جو آپ کو بڑے دھوکے سے بچا سکتی ہے

گزشتہ دو سال میں تین بار ایسا چاند گرہن لگ چکا ہے جس میں چاند کی رنگت سرخ تھی، اب دوسال میں یہ چوتھا سرخ چاند گرہن لگنے جا رہا ہے۔ حیران کن امر یہ ہے کہ چاروں بار یہ چاند گرہن یہودی مذہبی تہواروں کے دن لگا۔ پہلے بار 14اکتوبر2014ء ، دوسری بار 8اکتوبر2014ءاور تیسری بار 4اپریل 2015ءکو یہ چاند گرہن لگا اور اب 28ستمبر 2015ءکو لگنے جا رہا ہے۔ ان چاروں دنوں میں یہودیوں کے مذہبی تہوار تھے۔ امریکی اخبار نیویارک پوسٹ کی رپورٹ کے مطابق بعض افراد نے 28ستمبر کے روز ممکنہ قیامت کی تیاریاں بھی شروع کر دی ہیں اور اپنے گھروں میں اشیائے خورونوش اور دیگر استعمال کی چیزیں جمع کر رہے ہیں جو کسی بھی قدرتی آفت کے آنے پر استعمال کی جا سکیں۔

دنیا کا وہ انوکھا ترین گاﺅں جہاں لڑکے بھی پیدائش کے موقع پر لڑکیاں ہوتے ہیں

مزید : ڈیلی بائیٹس