محکمہ داخلہ نے نیشنل ایکشن پلان پر رپورٹ وزیراعلی پنجاب کو پیش کردی

محکمہ داخلہ نے نیشنل ایکشن پلان پر رپورٹ وزیراعلی پنجاب کو پیش کردی

  

 لاہور(کرایم رپورٹر )محکمہ داخلہ نے نیشنل ایکشن پلان پر رپورٹ وزیراعلیٰ پنجاب کو پیش کر دی ، 13ہزار 782مدارس، 62ہزار 678مساجد اور 2ہزار 925 عبادت گاہوں کی جیو ٹیگنگ کی گئی۔زرائع کے مطابق محکمہ داخلہ نے نیشنل ایکشن پلان پر عملدرآمد کے حوالے سے تفصیلی رپورٹ وزیراعلی پنجاب شہباز شریف کو پیش کر دی جس کے مطابق نیشنل ایکشن پلان کے تحت 97ہزار 608مقدمات درج کیے گئے جبکہ 1لاکھ 5ہزار 131افراد گرفتار کیے گئے۔ مقدمات نفرت انگیز مواد رکھنے اور تقاریر کرنے پر درج کیے گئے۔رپورٹ میں بتایا گیا کہ کرایہ داری ایکٹ کے تحت 14804مقدمات درج ہوئے ، مجموعی طور پر 21ہزار 959افراد گرفتار کیے گئے۔اس کے ساتھ 13ہزار 782مدارس، 62ہزار 678مساجد اور 2ہزار 925 عبادت گاہوں کی جیو ٹیگنگ کی گئی ۔واضح رہے کہ دہشتگردی کے بڑھتے واقعات کے بعد نیشنل ایکشن پلان وضع کیا گیا تھا جس کے تحت صوبے بھر کے تمام ایسے شہروں جہاں دہشتگردوں کی موجودگی کی اطلاع ہو کارروائی کرنے کا فیصلہ کیا گیا تھا جس کے تحت پنجاب بھر میں نیشنل ایکشن پلان شروع کیا گیا، پاک فوج ، رینجرز اور قانون نافذ کرنے والے دیگر اداروں نے مل کر کارروائیوں کا آغاز کیا۔دہشتگردوں کی گرفتاری کے ساتھ ان کے سہولت کاروں کے خلاف بھی کارروائیاں عمل میں لائی گئیں جس کے تحت کرائی داری قانون پر سیکڑوں مقدمات درج کیے گئے۔

مزید :

علاقائی -