تاریخی دوستانہ تعلقات کو مزید مستحکم بنانے پر چین کے مشکور ہیں : پرویز رشید

تاریخی دوستانہ تعلقات کو مزید مستحکم بنانے پر چین کے مشکور ہیں : پرویز رشید

  

گانسو(اے پی پی) وفاقی وزیر اطلاعات، نشریات و قومی ورثہ سینیٹر پرویز رشید نے کہا ہے کہ پاکستان اور چین کے درمیان معاشی تعاون اور تجارت میں اضافہ سے ثقافت، اطلاعات اور ادب کے شعبوں میں تعلقات مزید مستحکم ہوں گے، پاکستان قدیم شاہراہ ریشم کے ذریعے تاریخی دوستانہ تعلقات کو مزید مستحکم بنانے پر جمہوریہ چین کا مشکور ہے، فلموں اور ڈراموں کے تبادلوں سے چینی اور پاکستانی معاشرہ ایک دوسرے کی ثقافت، روایات، اقدار اور طرز حیات سے باہمی آگاہی کے ساتھ مزید قریب آئیں گے۔ انہوں نے یہ بات پیر کو یہاں چین کے صوبہ گانسو کے شہر ڈن ہوانگ میں چین کے وزیر برائے سٹیٹ ایڈمنسٹریشن آف پریس پبلکیشن ریڈیو، فلم اینڈ ٹیلی ویژن ٹونگ گینگ کے ساتھ ملاقات کے دوران کہی۔ یہ ملاقات سلک روڈ انٹرنیشنل کلچرل ایکسپو کے موقع پر ہوئی جو ڈن ہوانگ میں منعقد ہورہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ چین کے ون بیلٹ ون روڈ انیشیٹیو کے ساتھ ہماری وابستگی سے تعلقات کو مزید تقویت ملی ہے اور اس سے انفراسٹرکچر، روزگار، یکجہتی اور پاکستان میں ہمہ گیر ترقی فراہم ہو گی۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان چین اور یورپ کو مختصر راستے کیلئے رسائی میں بھی سہولت دے گا۔ سینیٹر پرویز رشید نے پاکستان کی تعمیر و ترقی کیلئے بڑی تعداد میں کام کرنے والے چینی باشندوں کی تعریف کی۔ انہوں نے کہا کہ دونوں ممالک کے درمیان معاشی تعاون اور تجارت میں اضافہ سے ثقافت، اطلاعات اور ادب کے شعبوں میں تعلقات مزید مستحکم ہوں گے۔سینیٹر پرویز رشید نے اپنے اور اپنے وفد کے پرتپاک استقبال اور شاندار مہمان نوازی پر چین کی حکومت اور صوبہ گانسو کے عوام سے اظہار تشکر کیا۔ چین کے وزیر برائے سٹیٹ ایڈمنسٹریشن آف پریس پبلکیشن ریڈیو، فلم اینڈ ٹیلی ویژن ٹونگ گینگ نے اس موقع پرکہا کہ چین کے عوام پاکستان کو دنیا میں اپنا بہترین دوست تصور کرتے ہیں۔۔ چینی نائب وزیر نے بھی اس کی توثیق کی۔ سینیٹر پرویز رشید نے انہیں یقین دلایا کہ پاکستان روڈ میپ پر تیزی سے عملدرآمد کی سہولت فراہم کرے گا۔ ملاقات کے دوران ای پی ونگ کے ڈائریکٹر جنرل شفقت جلیل اور پاکستانی سفارتخانہ کے پریس اینڈ کلچرل اتاشی آصف الرحمن خان بھی موجود تھے جبکہ اس موقع پر چینی نائب وزیر کے ہمراہ چینی سٹیٹ ایڈمنسٹریشن آف پریس پبلیکیشنریڈیو، فلم اینڈ ٹیلی ویژن کے بین الاقوامی تعاون کے ڈائریکٹر جنرل اور نائب ڈائریکٹر جنرل بھی موجود تھے۔

مزید :

صفحہ اول -