پولیس جوان معاشرہ میں پائی جانیوالی ہر جرم اور خرابی پر کڑی نظر رکھیں ،آئی جی پی

پولیس جوان معاشرہ میں پائی جانیوالی ہر جرم اور خرابی پر کڑی نظر رکھیں ،آئی جی ...

  

پشاور(کرائمز رپورٹر )انسپکٹر جنرل آف پولیس خیبر پختونخوا ناصر خان دُرانی نے آ ج سنٹرل پولیس آفس پشاور میں منعقدہ ایک تقریب میں پشاور پولیس کے اہلکاروں کو نوزائیدہ بچوں کی چوری اور خریدو فروخت کرنے والے گینگ کو بے نقاب اورگرفتار کرنے پر نقد انعامات اور توصیفی اسناد سے نوازا۔تفصیلات کے مطابق پشاور پولیس کو میٹرنٹی ہومز سے نومولود بچے چُرا کرآگے فروخت کئے جانے کے گینگ کے بارے میں مخبرکی اطلاع ملی تھی۔ جس پر کاروائی کرتے ہوئے پولیس ٹیم نے بمقام ڈبگری گارڈن سے ایک عورت کو گرفتار کیا جس نے سرسری انٹاروگیشن کے بعد نوزائید بچوں کو میٹرنٹی ہومز سے چُرانے اور آگے فروخت کرنے اور اسمیں ملوث گینگ کے نام اُگل دیئے۔ پشاور پولیس نے گرفتار عورت کی نشاندہی پر ایک مکان پر چھاپہ مارکر چالیس دن کی نوزائیدہ بچی کو بھی برآمد کیا۔ جو تین لاکھ روپے کے عوض فروخت کرنے جارہی تھی۔ گرفتار گروہ نے 9سے زیادہ بچے اور بچیاں فروخت کرنے کا اعتراف بھی کر لیاتھا۔ پولیس نے گروہ میں شامل پانچ خواتین اور دو مردوں کو بھی گرفتار کیاتھا۔ گروہ میں مختلف نجی ہسپتالوں کا عملہ بھی شامل تھا۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے آئی جی پی ناصر خان دُرانی نے اس گھناؤنے جرائم میں ملوث گینگ کو بے نقاب اورملزموں کو گرفتار کرنے کی پشاور پولیس کی پیشہ ورانہ کاوشوں کی تعریف کی اور کہا کہ بچوں کو اغوا ہونے کا کرب اور غم صرف اس کے والدین ہی بہتر جانتے ہیں اور پولیس نے نومولود بچی کو برآمد کرکے نہ صرف اُن کے والدین کو خوشی دلائی ہے بلکہ نومولود بچے اور بچیوں کے چوری ہونے اور فروخت کرنے کے تدارک کو یقینی بناکر عوام کا اعتماد بھی بحال کردیا ہے۔ آئی جی پی نے انعام یافتہ گان کی حساس نوعیت کے اس کیس کو بڑی مہارت اور کامیابی سے ورک آؤٹ کرنے کی کوششوں کو سراہا اور اُن پر زور دیا کہ وہ معاشرے میں پائی جانے والی ہر جرم اور خرابی پر کڑی نظر رکھیں۔ اور اپنی استعدادی صلاحیتوں کو بروئے کار لاتے ہوئے ان کے حل کو ہر قیمت پریقینی بنائیں۔ اس موقع پر آئی جی پی نے کاروائی میں حصہ لینے والے ایس پی کینٹ کاشف ذوالفقار، ایس ایچ اُو تھانہ شرقی انسپکٹر ملک حبیب، ہیڈ کانسٹیبل میر اعظم، لیڈی کانسٹیبل شمیم اور کانسیبلان سجاد صابر، رفعت اللہ اور اسحاق کو نقد انعامات اور توصیفی اسناد سے نوازا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -