ہنگو میں اقلیتی برادری قبرستان سے محروم ہے ،نصیب چند

ہنگو میں اقلیتی برادری قبرستان سے محروم ہے ،نصیب چند

  

ہنگو(بیورورپورٹ) ہنگو اقلیتی برادری قبرستان سے محروم ۔14سالہ نوجوان کی تدفین کے لئے مسافروں کے قبرستان میں سات جگہ قبریں کھودنے پر بھی جگہ نصیب نہ ہو سکی ۔ہنگو اقلیتی برادری کا شدید احتجاج اور رد عمل کا اظہار ۔تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز ہنگو شہر اقلیتی برادری محلہ پریم نگر سے تعلق رکھنے والے 14سالہ نوجوان راجیش کمار ولد رام لال کی بیماری کے باعث فوتگی پر قبرستان کی عدم دستیابی کے باعث تدفین میں شدید مشکلات کا سامنا رہا ۔صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے اقلیتی برادری کے ممتاز رہنماء پیر نصیب چند و دیگر مشران نے کہا کہ مرحوم راجیش کمار کی میت کی تدفین کے لئے مسافروں کے قبرستان میں سات مقامات پر قبریں کھودنے کی کوششیں کی گئیں جن میں میت کو دفنانے کی جگہ نہیں ملی ۔انہوں نے کہا کہ رات گئے تک مسافروں کے قبرستان میں بڑی مشکل سے ایک کھونے میں میت کو دفن کیا گیا ۔اقلیتی رہنماؤں نے کہا کہ اقلیتی برادری عرصہ دراز سے قبرستان کی اراضی الاٹمنٹ کے لئے حکومت اور انتظامیہ سے مطالبہ کرتی آرہی ہیں۔انہوں نے کہا کہ اقلیتوں کے ساتھ امتیازی سلوک کیا جا رہا ہے اور آئینی حقوق سے بھی محروم رہ کر اقلیتی برادری مرنے کے بعد ذلیل و خوار کئے جاتے ہیں۔انہوں نے خبر دار کیا کہ اگر فوری طور پر حکومت اور انتظامیہ نے قبرستان کی زمین الاٹ کر کے مسئلہ حل نہیں کرایا تو آئیندہ لائحہ عمل کے تحت سڑکوں پر احتجاجی دھرنوں کا آغاز کیا جائے گا اور مستقبل میں اقلیت برادری میتوں کو انتظامیہ کے دفاتر کے سامنے رکھنے پر مجبور ہو گی ۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -