حکومت سیفٹی قوانین پر سختی سے عمل کرائے،آل پاکستان ورکرز کنفیڈریشن

حکومت سیفٹی قوانین پر سختی سے عمل کرائے،آل پاکستان ورکرز کنفیڈریشن

لاہور(پ ر)حکومت کارکنوں کو کام پر جان وصحت کے تحفظ کے لئے صنعتی و تجارتی اداروں میں سیفٹی قوانین پر سختی سے عمل کرائے ۔بجلی، کانوں، ٹرانسپورٹ، کیمیکل، ٹیکسٹائل کی صنعتوں میں کارکنوں کے حادثات میں دن بدن اضافہ ہوگیا آج تک سیفٹی کے قانون کی خلاف ورزی پرگارمنٹس فیکٹری بلدیہ ٹاؤن کراچی کے مالک کو سزا نہیں دی گئی پاکستان کا محنت کش طبقہ وفاقی و صوبائی حکومت سے پْرزور مطالبہ کرتا ہے کہ وہ اپنی آئینی اور عالمی ذمہ داریوں کو پورا کرانے کے لئے حکومت پاکستان کی آئی ایل او کی توثیق شدہ کنونشن نمبر 81 کے مطابق سیفٹی قوانین پر عمل کرکے کارکنوں کی جان وصحت کا تحفظ کریں پاکستان کے پانچ کروڑ 80 لاکھ کارکنوں کے سیفٹی قوانین چیک کرانے کے لئے صرف 511 لیبر انسپکٹر ہیں حکومت اور تمام سیاسی جماعتیں باہمی صلاح ومشورہ سے قومی اقتصادی خود کفالت پالیسی کا نفاذ کریں جس سے ملک میں غربت، بے روزگاری اور جہالت جلد دور ہوسکے۔ یہ مطالبات آل پاکستان ورکرز کنفیڈریشن کے اجلاس منعقدہ بختیار لیبرہال لاہور میں ایک متفقہ قرار داد کے ذریعے کئے گئے جس میں واپڈامحکمہ بجلی،ریلوے،پی ڈبلیو ڈی،ٹیکسٹائل، انجینئرنگ، کیمیکل، ٹرانسپورٹ، ہاؤسنگ، ایریگیشن، بینکوں کے شعبوں سے ملحقہ ٹریڈیونینوں کے نمائندگان اور کارکنو ں نے بھاری تعداد میں شرکت کی اس موقعہ پر بزرگ مزدور راہنماء خورشیداحمد جنرل سیکرٹری، روبینہ جمیل، یوسف بلوچ چیئرمین،نیاز خان،اکبر علی خان، اْسامہ طارق، چوہدری فیاض احمد،خوشی محمدکھوکھر،چوہدری محمد انور ، سعید گجر،جمیل بٹ،صلاح الدین ایوبی ودیگر نمائندگان کنفیڈریشن نے خطاب کیا اجلاس میں ایک قرار داد کے ذریعے حکومت سے مطالبہ کیاگیا کہ وہ قومی صنعت ، تجارت اور زراعت کی ترقی کے لئے ملک کے ایک لاکھ میگاواٹ ہائیڈل پاور جنریشن کو سستی بجلی بحساب ڈیڑہ روپے فی یونٹ جبکہ نجی تھرمل پاور ہاؤسوں کی 16 روپے فی یونٹ ہے حکومت ہائیڈل پاور ڈیمز سرکاری شعبے میں تعمیر کرانے کے لئے وافر فنڈ مخصوص کرے ملک میں اشرفیہ طبقہ سے ٹیکس وصول کرے 20 کروڑ آبادی میں سے صرف ساڑھے بارہ لاکھ شہری ٹیکس ادا کرتے ہیں ان میں 80 فیصدی تنخواہ دار طبقہ ہے اجلاس میں ایک قرار داد کے ذریعے اقوام متحدہ اور دنیا کے تمام انسان اقوام سے پْرزور اپیل کی گئی کہ وہ برما حکومت کی مسلمانوں پر نسل کشی پالیسی کی مذمت کرتے ہوئے مسلم اقلیت کا قتل عام بند کرائے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1