یاسین ملک کی طرف سے غیر قانونی نظربندیوں کیخلاف انسانی حقوق کمیشن میں دو عرضداشتیں دائر

یاسین ملک کی طرف سے غیر قانونی نظربندیوں کیخلاف انسانی حقوق کمیشن میں دو ...

سرینگر(آن لائن)مقبوضہ کشمیر میں جموں وکشمیر لبریشن فرنٹ کے چےئرمین محمد یاسین ملک نے کہا ہے کہ دختران ملت کی سربراہ آسیہ اندرابی اور ان کی ساتھی فہمیدہ صوفی پر لاگو کالے قانون پبلک سیفٹی ایکٹ کو عدالت کی طرف سے کالعدم قراردیے جانے کے باوجود بھارتی حکام انہیں رہا نہ کرکے سیاسی انتقام کا نشانہ بنارہے ہیں۔ محمد یاسین ملک نے سرینگر میں مقبوضہ علاقے کے انسانی حقوق کمیشن کا دورہ کیا اور دو عرضداشتیں دائر کیں۔انہوں نے کمیشن کے سربراہ ریٹائرڈ جسٹس بلال نازکی سے بھی ملاقات کی۔ اپنی پہلی درخواست میں انہوں نے افسوس کا اظہار کیا کہ آسیہ اندرابی اور فہمیدہ صوفی کو ایک جھوٹے مقدمے میں جموں کی جیل میں نظربند رکھا گیا ہے۔ انہوں نے جموں کی امپھالہ جیل میں اسیر آسیہ انداربی اور انکی رفیق فہمیدہ صوفی کی حالت زار اور انکی مسلسل غیر قانونی نظربندی پر تشویش ظاہر کرتے ہوئے کہاکہ دونوں رہنماء طویل عرصے سے نظربند ہیں اور کافی علیل ہیں اور کمیشن کو انہیں بے جا طور پر ظلم و جبر کا نشانہ بنانے کا فوری نوٹس لینا چاہئے۔ انہوں نے کہاکہ کشمیر میں بھارتی فورسز کی طرف سے مسلسل انسانی حقوق کی دھجیاں اڑائی جارہی ہیں اور جیلوں میں نظربند ہزاروں کشمیریوں کا بھی کوئی پرسان حال نہیں ہے۔

لبریشن فرنٹ کے سربراہ نے اپنی دوسری درخواست میں سرینگر سے 16نوجوانوں کی بے بنیاد کیسوں میں غیر قانونی نظربندی کا مسئلہ اٹھایا ہے۔ انہوں نے ان گرفتاریوں کو کشمیر یوں کی جائز جدوجہد آزادی کو دبانے کے لیے ایک بھارتی ہتھکنڈہ قراردیا۔ انہوں نے کہاکہ انہوں نے سرینگر سینٹرل جیل میں اپنی نظربندی کے دوران ان میں سے 15نوجوان جو وہاں نظر بند ہیں سے ملاقات کی اور اس دوران ان نوجوانوں نے انہیں اپنی بے گناہی کے بارے میں بتایا ۔ انہوں نے انسانی حقوق کمیشن پر زوردیا کہ وہ ان مسائل کانوٹس لے اور متاثرہ خاندانوں کو انصاف فراہم کرے۔ محمد یاسین ملک نے کہا کہ قابض حکام گرفتاریوں اور نظربندیوں کو کشمیری نوجوانوں اور حریت رہنماؤں کو ہراساں کرنے کے لیے ایک حربے کے طورپر استعمال کررہے ہیں ۔ اس حوالے سے غیر جانب دارانہ تحقیقات کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ایک نئی اور غیر جانب دارانہ تحقیقات کے ذریعے ان نوجوانوں کو انصاف فراہم کرنا انتہائی ضروری ہے اور انسانی حقوق کمیشن کو اس ضمن میں خود سے تحقیقات کرکے ان نوجوانوں کے مستقبل اور زندگیوں کو درپیش خطرات کا ازالہ کرنا چاہئے تاکہ انہیں انصاف فراہم کیاجاسکے۔ انہوں نے کمیشن پر زور دیاکہ وہ انسانی حقوق کے حوالے سے اپنی ذمہ داریاں پوری کرے اور نہتے کشمیریوں پر ڈھائے جانیوالے مظالم کا سلسلہ بند کرانے کیلئے اپنا اثر رسوک استعمال کرے۔ لبریشن فرنٹ نے تحریک آزادی کشمیر کے شہید اوّل اعجاز احمد ڈار کوانکی 29ویں برسی پر شاندار خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ شہید اعجاز ڈار نے تحریک آزادی کو اپنی جان دیکر جلابخشی ہے اوراُن کی جدوجہد اور قربانی ہماری تاریخ کا ایک سنہری باب ہے ۔

مزید : عالمی منظر