ملک بھر کی جامعات میں سمارٹ یونیورسٹی پراجیکٹ کا آغاز ہو گیا

ملک بھر کی جامعات میں سمارٹ یونیورسٹی پراجیکٹ کا آغاز ہو گیا

لاہور(ایجوکیشن رپورٹر) ہائر ایجوکیشن کمیشن اور ہواوے کے تعاون سے ملک بھر کی جامعات میں سمارٹ یونیورسٹی پراجیکٹ کا آغاز ہو گیا ۔ جس کا مقصد یونیورسیز کے اساتذہ و طلبہ کو فری انٹرنیٹ اور وائی فائی کی سہولیات فراہم کرنا ہے۔ سمارٹ یونیورسٹی پراجیکٹ کے تحت یو نیو ر سٹیز کے نظام کو بہتر بنانے میں مدد ملے گی ۔چیئر مین ایچ ای سی ڈاکٹر مختار احمد نے کہا ہے پاکستان میں 1.5 ملین سے زائد افرادانٹرنیٹ کا استعمال کر رہے ہیں جس کی بدولت اسوقت پاکستان انٹرنیٹ استعمال کرنیوالا ایشیاء کا تیسرا بڑا ملک بن گیا ہے ، چین کی مدد سے پاکستان میں بھی اب انفارمیشن ٹیکنالوجی کے مراکزمیں اضافہ ہو رہا ہے جو خوش آئند ہے ۔ سمارٹ ٹیکنالوجی کی مدد سے افغانستان اور وسطی ایشیا کے ممالک سمیت اپنے پڑوسی ممالک کی مدد بھی کریں گے۔ تین سال قبل تعلیم کا فنڈ 100 ارب روپے تھا جبکہ موجودہ حکومت نے تعلیمی فنڈ کو بڑ ھا دیا ہے، اور اب تعلیمی فنڈ 215 بلین روپے تک جا پہنچا ہے جس سے تعلیمی شعبے میں انقلاب آئے گا، سمارٹ اور محفوظ یونیورسٹیوں کا منصو بہ سے جدید ٹیکنالوجی کیساتھ ساتھ ملک کے تعلیمی شعبے کی ترقی میں مدد کرے گی۔

سمارٹ یونیورسٹی منصوبہ

مزید : علاقائی