ملک میں احتساب کا دوہرا معیار ہے

ملک میں احتساب کا دوہرا معیار ہے
 ملک میں احتساب کا دوہرا معیار ہے

  

لاہور (آن لائن) سابق وزیر اعظم راجہ پرویز اشرف نے کہا ہے کہ احتساب کا دوہرا معیار اپنا یا گیا ہے۔ پانامہ کیس میں ملوث شریف فیملی کے نام ایگزٹ کنڑول لسٹ میں ابھی تک شامل نہیں جبکہ غریبوں کو نوکریاں دینے پر ہم عدالتوں میں بھی پیش ہو رہے اور میرا نام ای سی ایل میں بھی شامل ہے انہوں نے کہا کہ شریف فیملی کا نام ای سی ایل میں شامل کیا جائے یا ہمارے نام بھی نکالے جائیں۔ احتساب عدالت میں پیشی کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ عدالتوں میں پیش نہ ہونا شریف فیملی نے اپنا وطیرہ بنا رکھا ہے ایک سوال کے جواب میں راجہ پرویز اشرف نے کہا کہ وقت بتائے گا کہ وزیر اعظم کا مستقبل کیا ہے۔ فی الحال حکومت کا سارا نظام رکا ہوا ہے۔ انہوں نے کہا کہ لندن میں بیٹھ کر حکومت نہیں چلائی جا سکتی۔ راجہ پرویز اشرف نے کہا کہ ملکی حالات بہتری کی جانب جاتے دکھائی نہیں دے رہے۔ ہر طرف بے یقینی کی صورتحال ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ این اے 120 میں پیپلز پارٹی کو کم ووٹ ملنے پر تشویش ہے۔ تسلیم کرتا ہوں کہ لاہور اور وسطی پنجاب میں پیپلز پارٹٰی کی پوزیشن مستحکم ہیں۔ راجہ پرویز اشرف نے کہا کہ پیپلز پارٹی نے ہمیشہ عدالتوں کا احترام کیا لیکن قانون میں دہرا معیار نہیں ہونا چاہیے۔

پرویز اشرف

مزید : صفحہ اول