تھانہ فیکٹری ایریا کے پولیس اہلکارملزموں کو مبینہ طور پرپروٹوکول دینے لگے

تھانہ فیکٹری ایریا کے پولیس اہلکارملزموں کو مبینہ طور پرپروٹوکول دینے لگے

لاہور(نامہ نگار)ماڈل ٹاؤن کچہری میں تھانہ فیکٹری ایریا کے پولیس اہلکارملزموں کو مبینہ طور پرپروٹوکول دینے لگے جبکہ فیکٹری ایریا پولیس ملزمان کی حفاظت کے بجائے اپنے کاموں میں مصروف رہی تاہم جوئے کے مقدمے میں ملوث 5ملزم ہتھکڑیوں کے بجائے ہاتھوں میں رسیاں بندھے خود ہی عدالت میں پیش ہو گئے ۔عدالت نے پانچوں ملزموں کی 30،30 ہزار روپے کے مچلکوں کے عوض ضمانتیں منطور کرتے ہوئے انہیں رہا کرنے کا حکم دے دیا ہے ۔

جوڈیشل مجسٹریٹ محمد رمضان ڈھڈی کی عدالت میں پیشی سے قبل پانچوں ملزم ہتھکڑی کی بجائے رسیاں خود ہاتھ میں پکڑ کر کچہری میں گھومتے رہے،فیکٹری ایریا پولیس کا کہنا ہے کہ ان کے ہتھکڑیوں کی کمی ہے جس کے باعث ملزمان کے ہاتھ رسیوں سے باندھے گئے ،ملزمان کو جوڈیشل مجسٹریٹ کی عدالت فیکٹری ایریا پولیس نے ملزمان سلیم، شہزاد،عمران،کامران اور عاشق کے خلاف درج مقدمے کا چالان پیش کررکھا ہے،پراسیکیوشن نے عدالت کو بتایا کہ ملزمان جوئے کے مقدمے میں ملوث ہیں، پولیس نے ملزمان کو فیکٹری ایریا کے علاقے میں چھاپہ مار کر گرفتار کیا تھا،دوسری جانب ملزمان کے وکیل نے ضمانت کی درخواستیں دائر کرتے ہوئے موقف اختیار کیا کہ پولیس نے ملزمان کے خلاف بے بنیاد مقدمہ درج کیا ہے لہذا ان کی ضمانتیں منظور کی جائیں جس پر عدالت نے مذکورہ بالا حکم جاری کردیا ہے۔

مزید : علاقائی