چارسدہ میں تحریک انصاف کے ضلع ناظم کی سینئر صحافی کو قتل کی دھمکی

چارسدہ میں تحریک انصاف کے ضلع ناظم کی سینئر صحافی کو قتل کی دھمکی

چارسدہ(بیورو رپورٹ)تحریک انصاف کے ضلع ناظم فہد ریاض خان کا اے این پی کے رہنماء اور سینئر صحافی شاہ رضا شاہ کو قتل کرنے کی دھمکی ۔شا ہ رضا شاہ کی بہن کو بھی دھمکیاں ۔ضلع ناظم نے الزامات کو جھوٹ کا پلندہ قرار دیا۔ کسی نے الزام ثابت کیا تو 20لاکھ روپے بطور جرمانہ ادا کرونگا۔ ایک سوچے سمجھے منصوبے کے تحت تحریک انصاف کو بد نام کرکے سیاسی ساکھ کو نقصان پہنچا نے کی سازش ہو رہی ہے ۔ ضلع ناظم کی حیثیت سے اداروں پر چیک رکھنا ان کی ذمہ داری ہے ۔ تفصیلات کے مطابق اے این پی کے رہنماء اور سینئر صحافی شاہ رضا شاہ نے چارسدہ پریس کلب میں ہنگامی پریس کانفرنس سے خطاب کر تے ہوئے کہا کہ تحریک انصاف کے ضلع ناظم فہد ریاض خان نے ان کو قتل کرنے کی دھمکی دی ہے ۔ انہوں نے آئی جی اور ڈی پی او چارسدہ سے تحفظ فراہم کرنے کا مطالبہ کیا اور کہا کہ ان کے خاندان کو کوئی نقصان پہنچا تو ذمہ دار ضلع ناظم ہو نگے ۔ انہوں نے کہاکہ ضلع ناظم اعلیٰ سرکاری اداروں میں بے جا مداخلت کر رہے ہیں ۔ سید شاہ رضا شاہ کا کہنا تھا کہ چند دن قبل اس کی بہن جو کہ سکیل 15میں سکول ٹیچر ہے کا تبادلہ محکمہ تعلیم چارسد ہ نے ضلعی ناظم اعلی کے یونین کونسل میں واقع سکول میں کیا جس پر ضلع ناظم اعلیٰ نے اعتراض کرکے محکمہ تعلیم کو تبادلہ رکھوانے کا حکم دیا ۔ انہوں نے کہاکہ محکمہ تعلیم کے اعلی افسران بھی تبادلے کے حق میں ہیں مگر ضلع ناظم فہد ریاض خان رکاوٹیں ڈال رہے ہیں۔ انہوں نے صوبائی حکومت کی تعلیمی ایمرجنسی کے دعوؤں پر بھی شدید تنقید کی ۔انہوں نے کہاکہ ضلع ناظم اعلیٰ کے یونین کونسل میں واقع دونوں پرائمری سکولوں میں سینکڑوں کے تعداد میں طالبات زیر تعلیم ہے مگر دونوں سکولوں میں پچھلے دو سال سے مستقل ہیڈ مسٹریس موجود نہیں ۔انہو ں نے مزید کہا کہ ضلع ناظم کے ایماء پر ان کی بہن کو سکول میں ہراساں کرکے دھمکیاں دی گئی۔ دوسری طرف ضلعی ناظم اعلی فہد ریاض خان نے اس حوالے سے اپنے موقف میں بتایا کہ سید شاہ رضا شاہ نے ان پر جھوٹے الزامات لگائے ہیں اور ان کے سیاسی ساکھ کو نقصان پہنچانے کی بونڈی کو شش ہے ۔ انہوں نے کہاکہ شاہ رضا شاہ کے الزامات درست ثابت ہوئے تو وہ 20لاکھ روپے بطور جرمانہ اداکرنے کو تیار ہیں۔ انہوں نے واضح کیا کہ سرکاری اداروں کی کار کر دگی پر نظر رکھنا ان کی ذمہ داریوں میں شامل ہیں ۔قانون کے مطابق محکمہ تعلیم اس بات کی پابند ہے کہ ٹرانسفر کے حوالے سے ان کو منظوری کیلئے سمری بھیج دیں مگر محکمہ تعلیم نے قانون کی خلاف ورزی کر تے ہوئے ان کے علم میں لائے بغیر ٹرانسفر کا نوٹیفیکشن جاری کیا اور قانون کے مطابق انہوں نے حکم نامہ کینسل کر نے کے احکامات جاری کئے ہیں۔

مزید : کراچی صفحہ اول