حکومت کے پاس دینگی وائرس کا علاج نہیں:سردار حسین بابک

حکومت کے پاس دینگی وائرس کا علاج نہیں:سردار حسین بابک

پشاور( نیوز رپورٹر) خیبر پختونخوا اسمبلی کا اجلاس ڈپٹی سپیکر ڈاکٹر مہر تاج روغانی کی صدارت میں تلاوت کلام پاک سے شروع ہوا ،رخصت کی درخواستیں نمٹانے کے بعد ڈپٹی سپیکر ڈاکٹر مہر تاج روغانی نے اجلاس کے لئے مسند نشین حضرات اور پٹیشن کمیٹی کے ارکان کے ناموں کا اعلان کیا صوبائی وزیر قانون وپارلیمانی امور امتیاز شاہد قریشی ایڈوکیٹ نے صوبائی وزیر آبکاری ومحاصل کی جانب سے خیبر پختونخوا کنٹرول آف نارکوٹیکس سیٹینز بل 2017ء ایوان میں پیش کیا وزیر قانون وپارلیمانی امور امتیازشاہد قریشی ایڈوکیٹ نے صوبائی وزیر ابتدائی وثانوی تعلیم کی جانب سے خیبر پختونخوا ایلیمنٹری اینڈ سیکنڈری ایجوکیشن فاؤنڈیشن (ترمیمی) بل 2017ء ایوان میں پیش کیا اپوزیشن رکن جے یو آئی (ف ) کے حاجی منور خان نے اسمبلی کے باہر اساتذہ ولیکچررز کے احتجاجی مظاہرہ کا معاملہ ایوان میں اٹھایا اور مطالبہ کیا ان کے مسائل حل کئے جائیں ،مسلم لیگ (ن) کے پارلیمانی لیڈر سردار اورنگزیب نلوٹھا نے بھی اس بات پر زور دیا اور مطالبہ کیا کہ ان کے ساتھ کھڑے ہوں گے اے این پی کے پارلیمانی لیڈر سردار حسین بابک نے قومی وطن پارٹی کو اپوزیشن میں آنے خیر مقدم کیا اور توقع ظاہر کی کہ ان کے آنے سے اپوزیشن مزید مستحکم ہوگی انہوں نے کالج اساتذہ کے احتجاج کا ذکر کرتے ہوئے متوقع قانون سازی کو تنقید کا نشانہ بنایا انہوں نے کہا کہ صوبائی کابینہ نے ایک ڈرافٹ کی منظوری دے دی ہے اور اسے ارکان اسمبلی ،متعلقہ سٹیک ہولڈرز ،سٹینڈنگ کمیٹی اور میڈیا کے سامنے نہ لانا معنی خیز ہے انہوں نے کہا کہ یہ غیر سنجیدگی کا مظاہرہ ہے جس کے نتائج اچھے نہیں نکلیں گے انہوں نے کہا کہ حکومت کے پاس ڈینگی کے مچھر کا علاج نہیں ہے انہوں نے کہا کہ حکومت مشاورت کے بعد قانون سازی پر توجہ دے اور قوانین بلڈوز نہ کریں پی پی پی کی خاتون رکن نگہت یاسمین اورکزئی نے بھی معاملے پر بحث میں حصہ لیا اور کہا کہ اپوزیشن کی تمام جماعتیں احتجاجی اساتذہ کے ساتھ کھڑی ہیں انہوں نے کہا کہ ان اساتذہ کے بعد سات ہزار نرسیز بھی سڑکوں پر آنے والی ہیں جن کا سروسیز ایکٹ وعدے کے باوجود اٹھارہ ماہ سے نہیں بن رہا ،انہوں نے کہا کہ حکومت نے رویہ درست نہیں کیا تو ہم اسمبلی کو چلنے نہیں دیں گے مسلم لیگ ن کے راجہ فیصل زمان نے وزراء اور حکومتی ارکان کی عدم موجودگی کو تنقید کا نشانہ بنایا اور کہا کہ احتجاجی مظاہرین کو تسلی دینے کیلئے حکومت کے پاسکوئی آدمی نہیں جو باہر جاکر ان سے ملے اور تسلی دے قومی وطن پارٹی کی انیسہ زیب طاہر خیلی نے بحث میں حصہ لیتے ہوئے کہا کہ ان کی جماعت اپوزیشن میں بھر پور کردار ادا کرے گی انہوں نے کہا کہ مجوزہ بل جب ایوان میں آئے گا ہم اس پر تفصیلی بحث کریں گے اور بلڈوز نہیں ہونے دیں گے انہوں نے کہا کہ اپوزیشن اساتذہ کے ساتھ یکجہتی کیلئے ایوان سے علامتی واک آؤٹ کرے گی جس کے بعد اپوزیشن ارکان ایوان سے باہر چلے گئے حکومتی رکن حاجی فضل الہیٰ نے کہا کہ ہم نے اساتذہ سے بات چی ہے ان کیخلاف کوئی بل نہیں آیا ہے اپوزیشن صرف پوائنٹ سکورنگ کیلئے ان لوگوں کے ساتھ ملکر انہیں ورغلا رہی ہے تحریک انصاف کے شوکت یوسفزئی نے بھی اپوزیشن کے اقدام کو تنقید کا نشانہ بنایا ،اپوزیشن کی خاتون رکن نگہت اورکزئی نے آکر کورم کی نشاندہی کی جس کے بعد ڈپٹی سپیکر نے اجلاس کل تک کیلئے ملتوی کردیا ۔

مزید : کراچی صفحہ اول