کراچی، سینٹرل جیل میں انتہائی خطرناک قیدیوں کا نیٹ ورک توڑ گیا

کراچی، سینٹرل جیل میں انتہائی خطرناک قیدیوں کا نیٹ ورک توڑ گیا

کراچی(سٹاف رپورٹر،مانیٹرنگ ڈیسک ،نیوز ایجنسیاں)شہر قائد کراچی کی سینٹرل جیل میں انتہائی خطرناک قیدیوں کا نیٹ ورک توڑ کر 90 قیدیوں کو مختلف جیلوں میں منتقل کردیا گیا۔میڈیا رپورٹس کے مطابق کراچی سینٹرل جیل سے 2 خطرناک قیدیوں کے فرار کے بعد ایپکس کمیٹی نے قیدیوں کی صوبوں کی دیگر جیلوں میں منتقلی کا فیصلہ کیا تھا اور یہ فیصلہ جیل میں موجود خطرناک قیدیوں کا نیٹ ورک توڑنے کیلئے کیا گیا،اس حوالے سے رپورٹ محکمہ داخلہ میں جمع کرادی(بقیہ نمبر27صفحہ12پر )

گئی ہے جس کے مطابق کراچی سینٹرل جیل سے انتہائی خطرناک 90 قیدیوں کو صوبوں کی مختلف جیلوں میں منتقل کیا گیا ہے۔ رپورٹ کے مطابق قیدیوں کی منتقلی کے فیصلے پرعملدرآمد یکم اگست سے شروع کیا گیا جس میں پہلے مرحلے میں سکھر، راولپنڈی اور لاڑکانہ کی جیلوں میں قیدیوں کو منتقل کیا گیا۔رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ کالعدم تنظیم کے 2 خطرناک قیدیوں کو راولپنڈی منتقل کیا گیا اور 8 انتہائی خطرناک قیدی لاڑکانہ جبکہ 80 قیدیوں کو سکھر جیل منتقل کردیا گیا، مزید قیدیوں کی منتقلی کی بھی فہر ستیں بنائی گئی ہیں اور انہیں بھی جلد صوبے کی دیگر جیلوں میں منتقل کردیا جائے گا جبکہ اس حوالے سے جیل حکام نے محکمہ داخلہ کو بھی آگاہ کردیا ہے۔رپورٹ میں مزید بتایا گیا ہے کہ 68 قیدیوں کو جلد فوجی عدالتوں کے حوالے بھی کیا جائے گا۔واضح رہے کراچی سینٹرل جیل سے فرار ہونیوالے دو انتہائی خطرناک قیدیوں کے افغانستان پہنچنے کا انکشاف ہوا تھا۔

مزید : ملتان صفحہ آخر