پاک بحریہ کے نئے سربراہ کا تقرر ، 4 سینئر افسران کے نام وزیر اعظم کو ارسال

پاک بحریہ کے نئے سربراہ کا تقرر ، 4 سینئر افسران کے نام وزیر اعظم کو ارسال
پاک بحریہ کے نئے سربراہ کا تقرر ، 4 سینئر افسران کے نام وزیر اعظم کو ارسال

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاک بحریہ کے نئے سربراہ کی تقرری کا عمل شروع کر دیا گیا ہے،جس کے لئے وزیر اعظم کو چار نام ارسال کر دیئے گئے ہیں۔وزیر اعظم کو ارسال کئے گئے ناموں میں وائس ایڈمرل ظفر محمود عباسی، وائس ایڈمرل سید عارف اللہ حسینی، وائس ایڈمرل وسیم اکرم اور وائس ایڈ مرل کلیم شوکت کےنام نئے نیول چیف کیلئے زیرغور ہیں۔

ایڈیشنل سیشن جج محمد اختر بھنگو کی عدالت میں پیشی کے موقع پر2گروپوں کے درمیان تصادم

تفصیلات کے مطابق پاک بحریہ کے نئے سربراہ کا تقرر ی کے لئے وائس ایڈمرل ظر محمود عباسی، جو اس وقت چیف آف سٹاف ہیں، سنیارٹی میں پہلے نمبر پر ہیں۔ انہوں نے 1981ءمیں کمیشن حاصل کیا، پاکستان نیول اکیڈمی میں سورڈ آف آنر کا اعزاز حاصل کیا۔ برطانیہ کے رائل نیول کالج میں زیرتعلیم رہے،کمانڈنٹ پاکستان نیول اکیڈمی، کمانڈر سرفیس شپس اور ڈی جی پاکستان میری ٹائم سِکیورٹی ایجنسی بھی تعینات رہے۔

فہرست میں دوسرے نمبر پر وائس ایڈمرل سید عارف اللہ حسینی، ڈپٹی چیف آف آپریشنز ہیں۔ انہوں نے بھی 1981میں کمیشن حاصل کیا۔ برطانیہ میں اعلیٰ تعلیم حاصل کی، سرفیس شپس اور مائن وارفیئر سکوارڈن کو کمانڈ کیا،فریگیٹ پروگرام کے بھی انچارج رہے۔

وائس ایڈمرل وسیم اکرم کا سنیارٹی میں تیسرا، وائس ایڈمرل کلیم شوکت کا چوتھا نمبر ہے۔ دونوں افسران نے 1982 میں کمیشن حاصل کیا، اس وقت بالترتیب ڈپٹی چیف آف ٹریننگ اینڈ ایویلیوایشن اور کمانڈر پاکستان فلیٹ تعینات ہیں۔

واضح رہے پاک بحریہ کے موجودہ سربراہ ایڈمرل ذکاءاللہ 8 اکتوبر کو ریٹائر ہو رہے ہیں۔ وزیر اعظم کی سفارش پر صدر مملکت آئندہ نیول چیف کی منظوری دیں گے۔

مزید : قومی