زینب کے قاتل عمران علی نے پھانسی گھاٹ پر کھڑے ہو کر آخری الفاظ کیا ادا کیے تھے؟ ڈاکٹر شاہد مسعود نے تہلکہ خیز دعویٰ کردیا

زینب کے قاتل عمران علی نے پھانسی گھاٹ پر کھڑے ہو کر آخری الفاظ کیا ادا کیے ...
زینب کے قاتل عمران علی نے پھانسی گھاٹ پر کھڑے ہو کر آخری الفاظ کیا ادا کیے تھے؟ ڈاکٹر شاہد مسعود نے تہلکہ خیز دعویٰ کردیا

  


اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) پنجاب کے ضلع قصور میںایک بار پھر بچوں کے اغوا اور قتل کی وارداتوں میں اضافے کے باعث ہر صاحبِ اولاد تشویش میں مبتلا ہے، سنجیدہ حلقوں کو اب تک یہ بات سمجھ میں نہیں آرہی کہ آخر قصور سے ہی ایسے واقعات سب سے زیادہ کیوں رپورٹ ہورہے ہیں۔ بعض لوگ تو ڈاکٹر شاہد مسعود کا زینب قتل کیس کے وقت کیا گیا دعویٰ سچ ماننے لگے ہیں، ایسے میں سینئر تجزیہ کار نے ایک اور دعویٰ کرکے لوگوں کو حیرت میں مبتلا کردیا ہے۔

زینب قتل کیس کے وقت ڈاکٹر شاہد مسعود نے دعویٰ کیا تھا کہ مجرم عمران علی کا تعلق انٹرنیشنل مافیا سے ہے اور وہ بچوں کو اغوا کرکے ان کے ساتھ زیادتی کی ویڈیوز ڈارک ویب پر دے کر پیسے کماتا ہے۔ یہ دعویٰ سامنے آنے پر اس وقت کے چیف جسٹس ثاقب نثار نے اس کا از خود نوٹس لیا لیکن سپریم کورٹ میں تجزیہ کار اپنا دعویٰ ثابت کرنے میں ناکام رہے جس کے باعث انہیں پابندی کا سامنا کرنا پڑا۔

جمعہ کے روز ایک بار پھر ڈاکٹر شاہد مسعود نے زینب قتل کیس میں پھانسی کی سزا پانے والے مجرم عمران علی کے بارے میں ایک اور تشویشناک دعویٰ کیا ہے۔ نجی ٹی وی جی این این کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے ڈاکٹر شاہد مسعود نے کہا کہ جس وقت زینب کے قاتل کو پھانسی لگائی جارہی تھی تو اس وقت اس نے کہا تھا کہ وہ اکیلا نہیں ہے۔

ڈاکٹر شاہد مسعود نے کہا ’عمران علی کو جب پھانسی لگانے کیلئے لے جانے لگے تو اس نے کہا کہ یہ ہے پھندا اور یہ میں پھانسی لگنے جا رہا ہوں، میں صرف ایک بات آپ کو بتادوں کہ میں اکیلا نہیں تھا، کوٹ لکھپت جیل سے اس کے آخری جملوں کا ریکارڈ نکلوالیں، اس نے یہ بات کی تو اس کو کھینچتے ہوئے لے گئے اور اس کو پھانسی لگ گئی۔‘

مزید : علاقائی /اسلام آباد /پنجاب /قصور


loading...