محکمہ صحت کا سرکاری ہسپتالوں میں ایم ٹی آئی ایکٹ نافذ،خود مختاری کرنے کافیصلہ

محکمہ صحت کا سرکاری ہسپتالوں میں ایم ٹی آئی ایکٹ نافذ،خود مختاری کرنے ...

  

 لاہور(جاوید اقبال) محکمہ صحت نے سرکاری ہسپتالوں میں ایم ٹی آئی(میڈیکل ٹیچنگ انسٹی ٹیشن) ایکٹ نافذ کرنے کیلئے انتظامات کوحتمی شکل دے دی۔اس سلسلہ میں گزشتہ روز محکمہ صحت میں وزیر اعظم کے مشیربرائے صحت پروفیسر ڈاکٹر نوشیروان برکی کی زیر صدارت اہم اجلاس ہوا جس میں وزیر صحت پنجاب،سیکرٹری سپیشلائزڈ،سیکرٹری پرائمری اینڈ ہیلتھ، شوکت خانم سے ڈاکٹر عاصم،ہیلتھ پروفیشنل ڈاکٹر پروفیسر محمود شوکت و دیگر حکام نے شرکت کی۔اجلا س میں فیصلہ کیا گیا کہ پنجاب میں ایم ٹی آئی ایکٹ کو جلد از جلد نافذ کر دیا جائے گا۔آغاز میو ہسپتال لاہور اور میموریل ہسپتال سیالکوٹ سے کیا جائے گا۔ان ہسپتالوں میں آئندہ تین ہفتوں میں بورڈ آف گورنر تشکیل دیئے جائیں گے اور دو ہفتوں کے اندر جہاں نئے نظام کے تحت ڈین سمیت دیگر پوسٹیں ایڈورٹائز کی جائیں گی۔ یہ بھی فیصلہ کیا گیا کہ خود مختار کئے جانیوالے ہسپتالوں کو ون لائن گرانڈ کے تحت فنڈز دیئے جائیں گے۔اس پروگرام کے تحت ہر خود مختار ہسپتال کو سال میں ایک ہی دفع فنڈ دیا جائے گااور اس فنڈ کو ہسپتال کی انتظامیہ اپنے حساب سے سال بھر کے لئے ہر شعبہ کے لئے مختص کرے گی۔ اجلاس میں میو ہسپتال اور میموریل ہسپتال سیالکوٹ میں ڈین اور دیگر عہدوں کے لئے مختلف ناموں پر بھی غور کیا گیا۔ذرائع کے مطابق کے ای میڈیکل یونیورسٹی اور کے ای میڈیکل کالج کی الگ الگ حیثیت ہو گی۔ اس کے ڈین کے لئے پروفیسر محمود شوکت سے رائے طلب کی گئی جنہوں نے کہا کہ پیسوں کے بغیر ادارے نہیں چلتے اور پیسے کہاں سے آئیں گے۔ جس کے جواب میں ڈاکٹر پروفیسر نوشروان برکی نے کہا ک ہم ون لائن گرانڈ کے تحت فنڈ دیں گے۔دوسرے مرحلے میں سروسز ہسپتال لاہور اور جنوبی پنجاب کا ایک ٹیچنگ ہسپتال شامل کیا جائے گا جہاں ایم ٹی آئی ایکٹ نافذ ہو گا۔

ایم ٹی آئی ایکٹ 

مزید :

صفحہ اول -