بٹ، خیلہ اے این پی کے الحاج شیر بہادر خان پی ٹی آئی میں شامل 

بٹ، خیلہ اے این پی کے الحاج شیر بہادر خان پی ٹی آئی میں شامل 

  

 بٹ خیلہ(بیورورپورٹ)عوامی نیشنل پارٹی سخاکوٹ جدید سے منتخب سابق ممبر ضلع کونسل الحاج شیر بہادر خان نے مستعفی ہو کرپی ٹی آئی میں شمولیت کا اعلان کردیا۔ شمولیت کا اعلان انہوں نے اپنے حجرے واقع خدو شاہ صاحب ڈھیرئی ا کرام آباد میں ایک بڑے جلسے سے خطاب کے دوران کیا جس کے مہمانا ن خصوصی چیئرمین ڈیڈک کمیٹی ملاکنڈ و ممبر صوبائی اسمبلی حاجی پیر مصور خان غازی اورممبر قومی اسمبلی و چیئرمین سٹینڈنگ کمیٹی جنید اکبر خان تھے۔ شمولیتی جلسہ سے ایم پی اے پیر مصور خان، ایم این اے جنید اکبر خان، سابق ناظم الحاج شیر بہادر خان، مولانا سید الابرار،سابق ممبران ضلع کونسل پیر ظاہر شاہ،تحسین اللہ اور دیگر مقررین نے خطاب کیا۔ اس دوران اے این پی کے سابق ناظم الحاج شیر بہادر خان نے خاندان اور ساتھیوں سمیت مستعفی ہو کر پی ٹی آئی میں باقاعدہ شمولیت اختیار کی اور ممبران اسمبلی کو علاقے کے مسائل کے حوالہ سے سپاسنامہ پیش کیا۔ممبران اسمبلی جنید اکبر خان، پیر مصور خان غازی اور مرکزی ڈپٹی جنرل سیکرٹری حاجی نیک محمد خان نے شمولیت کرنے والے کارکنوں کو ٹوپیاں پہنائے۔ جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے ممبر صوبائی اسمبلی پیر مصور خان اور ممبر قومی اسمبلی جنید اکبر خان نے کہا کہ سابقہ حکومتوں کے عیاشیوں اور غلط پالیسیوں کی وجہ سے ملک شدید مالی بحران سے دوچار ہوگیا تھا جس کی وجہ سے موجودہ حکومت کو سخت فیصلے کرنے پڑے لیکن اب مشکل دور گزر چکا ہے اور انشا اللہ آنیو الا دور خوشیاں اور ترقیاں لیکر آئیگا۔انہوں نے کہا کہ ہم نے عوام سے نظام اور غریب عوام کی حالت زندگی بدلنے کا وعدہ کیا تھا جس پر من و عن عمل کیا جارہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ نہ ہم خود کرپٹ ہیں اور نہ ہی کسی کرپشن کرنے کی اجازت دینگے بلکہ سابقہ ادوار میں قومی خزانے کو پہنچائے گئے نقصان کے ایک ایک پائی کا حساب کرکے کرپٹ مافیا سے وصول کرینگے اور قومی خزانے میں جمع کرکے عوام کے فلاح و بہبود اور ملکی ترقی پر خرچ کرینگے۔ انہوں نے کہا کہ سرکاری نوکریاں اب فروخت نہیں ہو رہے ہیں بلکہ میرٹ پر بھرتیاں کرکے حق دار کو ان کا حق دیا جارہا ہے جس سے سیاسی مداریوں کی تجارت بند ہو گئی ہے اور اب لوگوں کو ممبران اسمبلی، وزرا اور سنیٹروں کے حجروں کے چکروں سے نجات مل چکی ہے۔ انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی میں لوگوں کی شمولیت ہمارے حکومت اور قائدین پر عوام کے بڑھتے ہوئے اعتماد کا مظہر ہے۔     

مزید :

پشاورصفحہ آخر -