کراچی:پولیس اہلکار کے قتل کا مقدمہ بھائی کی مدعیت میں قتل

کراچی:پولیس اہلکار کے قتل کا مقدمہ بھائی کی مدعیت میں قتل

  

کراچی(کرائم رپورٹر)کراچی کے علاقے کورنگی مہران ٹاؤن میں پولیس اہلکار عارف تنولی کے قتل کا مقدمہ شہید اہلکار کے بھائی کی مدعیت میں سی ٹی ڈی میں درج کرلیا گیا۔ مقدمہ قتل اور انسداد دہشتگردی دفعات کے تحت نامعلوم افراد کے خلاف درج کیا گیاہے۔گزشتہ روز کورنگی میں مسلح افراد نے موٹرسائیکل پر سوار پولیس اہلکار عارف تنولی کو فائرنگ کرکے زخمی کردیا، جسے فوری طور پر اسپتال منتقل کیا گیا جہاں وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ گیا۔جاں بحق اہلکارعارف ایس یس یو ون فائیو میں تعینات تھا۔واضح رہے کہ کراچی میں ڈیوٹی پر جاتے اور واپس آتے پولیس اہلکاروں کونشانہ بنانے والے گروہ کو پکڑنے میں پولیس تاحال ناکام ہے۔ گزشتہ ڈھائی ماہ کے دوران ٹارگٹ کلنگ میں پانچ پولیس اہلکاروں کو شہید کیا جاچکا ہے۔پولیس والوں کو قتل کرنے کی وارداتوں میں مماثلت بھی برقرار ہے، تمام وارداتوں میں ڈیوٹی پر جاتے اور واپس آتے پولیس اہلکار و افسران پر حملے ہوئے ہیں۔4جولائی کو پولیس اہلکار نعمان،11 جولائی کو کانسٹیبل اصغراحمد، 23 جولائی کو پولیس افسر غلام محمد، 31 جولائی کو ایک سب انسپکٹر اور 18ستمبرکو عارف کو نشانہ بنایا گیا۔حملہ آور اہلکاروں کو نشانہ بنانے کے بعد ان کے ہتھیار بھی اپنے ہمراہ لے کر فرار ہوئے۔ قتل کی چاروں وارداتوں کے مقدمات سی ٹی ڈی سول لائن میں دہشت گردی، قتل، اقدام قتل کی دفعات کے تحت درج کیے گئے مگر کوئی بھی قاتل قانون کے شکنجے میں نہ آسکا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -