اے پی سی سے ملکی سیاست پر گہرے اثرات مرتب ہونگے‘ ثاقب خورشید 

  اے پی سی سے ملکی سیاست پر گہرے اثرات مرتب ہونگے‘ ثاقب خورشید 

  

وہاڑی(بیورو رپورٹ‘ نامہ نگار)پاکستان مسلم لیگ ن کے ایم پی اے میاں ثاقب خورشیدنے اپنے بیان میں کہاہے کہ حکمران اپوزیشن اورپاکستان بارکونسل کی مشترکہ اے پی سی کی کامیابی سے پہلے ہی بوکھلاہٹ کاشکارتھی اے پی سی سے اس کی بوکھلاہٹ میں مزیداضافہ ہوگیاہے اسی بوکھلاہٹ کانتیجہ ہے کہ حکومتی وزراء  الٹے سیدھے بیانات دے رہے ہیں اپوزیشن کامتحدہوناحکمرانوں کوکانٹے کی طرح کھٹک رہاہے اگران کابس چلے توپوری (بقیہ نمبر8صفحہ 6پر)

اپوزیشن کوقیدخانہ میں ڈال دیں وہ گزشتہ روزصحافیوں سے گفتگوکررہے تھے ان کاکہناتھاکہ وزیراعظم عمران خان میں اپوزیشن راہنماؤں کاسامناکرنے کاحوصلہ ہی نہیں ہے وہ جب بھی پارلیمنٹ میں آتے ہیں توآنے سے پہلے پی ٹی آئی کے ایسے اراکین اسمبلی کواپنے اردگردرہنے کی تلقین کرتے ہیں جوشوروشرابامیں ماہرہیں اورچندمنٹ پارلیمنٹ میں بیٹھنے کے بعدفرارہونے میں اپنی عافیت سمجھتے ہیں وزیراعظم عمران خان کومیاں نوازشریف فوبیاہوچکاہے اوران کوخواب میں بھی میاں نوازشریف نظرآتے ہونگے۔ ان کاکہناتھاکہ اپوزیشن کی اے پی سی کے ملکی سیاست پرگہرے اثرات مرتب ہونگے  سابق وزیراعظم میاں نوازشریف کااے پی سے سے ویڈیولنک خطاب کااعلان ہوتے ہی حکومتی حلقوں میں صف ماتم بچھ چکی ہے ان کایہ بھی کہناتھاکہ موجودہ حکمرانوں نے صحافت پرغیراعلانیہ پابندیاں لگاکرصحافیوں کوڈرانے کی کوشش کی لیکن صحافیوں نے جب ان کی کوشش کوناکام بنادیاتواب صحافیوں کے خلاف بے بنیادمقدمات بنائے جارہے ہیں لیکن تاریخ گواہ ہے کہ جس حکمران نے بھی صحافت کوقیدکرنے کی کوشش کی تو اس کے اقتدارکاسورج ہمیشہ کیلئے ڈوب گیاانہوں نے مزیدکہاکہ حکمرانوں نے عوام کومہنگائی کی دلدل میں ایسادھکیلاہے کہ غریب خاندان توایک طرف سفیدپوش طبقہ بھی اپنے بچوں کودووقت کی روٹی کھلانے میں مشکلات کاشکارہے حکمرانوں کے خوف کایہ عالم ہے کہ بلدیاتی انتخابات کااعلان کرکے انتخابات کااعلان واپس لے لیاہے بلدیاتی انتخابات میں پی ٹی آئی کی شکست نوشتہ دیوارہے۔

ثاقب خورشید

مزید :

ملتان صفحہ آخر -