موسم سرما میں انڈسٹری،گھریلو صارفین کو گیس بحران کا سامنا ہوگا:ندیم بابر

موسم سرما میں انڈسٹری،گھریلو صارفین کو گیس بحران کا سامنا ہوگا:ندیم بابر

  

 اسلام آباد، لاہور (این این آئی)ترکمانستان نے پاکستان کو تاپی منصوبے کے حوالے سے خدشات دور کرنے کی یقین دہانی کرائی ہے معاون خصوصی پٹرولیم ندیم بابر اور تاپی پائپ لائن کمپنی کے سربراہ کی زیر صدارت تاپی منصوبے پر اجلاس ہوا پٹرولیم ڈویژن کے اعلامیے کے مطابق دونوں ممالک نے کورونا کے باوجود منصوبے کی پیشرفت پر اطمینان کا اظہار کیا ترکمانستان کے حکام نے بتایا کہ منصوبے کی تعمیر کے لیے قرض دینے والے عالمی اداروں کیساتھ مذاکرات طے پا رہے ہیں جبکہ پاکستانی حکام نے کہا ہے کہ زیر التواء  امور کی تکمیل کے بعد جلد پاکستان میں تاپی گیس پائپ لائن منصوبے کا سنگ بنیاد رکھنا چاہتے ہیں ترکمانستان افغانستان میں ہرات تک پائپ لائن کی تعمیر شروع کرنے کا ارادہ رکھتا ہے پاکستان کی طرف سے افغانستان کے ساتھ ہی پاکستان میں بھی منصوبے پر کام شروع کرنے کی تجویز پیش کی گئی ہے ذرائع کے مطابق پاکستان نے مطالبہ کیا کہ تاپی منصوبے کی قیمت میں افغانستان کا رسک شامل نہ کیا جائے اور پاکستان کے لیے گیس ڈلیوری پوائنٹ ترکمانستان افغانستان سرحد کی بجائے چمن رکھا جائے ترکمانستان کی طرف سے پاکستان کو یقین دہانی کرائی گئی کہ متعلقہ معاہدوں میں قیمت اور ڈلیوری پوائنٹ سے متعلق پاکستان کے خدشات کا تدارک کیا جائے گا تاپی منصوبے کے تحت پاکستان کو یومیہ ایک ارب 32کروڑ مکعب فٹ گیس فراہم ہونی ہے۔ وزیر اعظم کے معاون خصوصی برائے پٹرولیم ندیم بابر نے کہا ہے کہ ملک میں گیس کی قلت دور کرنے کیلئے حکومت دسمبر میں آف شور میں گیس کی تلاش کیلئے 10بلاکس کے ٹینڈرز جاری کرے گی  جے آئی ڈی سی کے بارے میں عدالتی حکم پر اس طرح عملدرآمد کریں گے کہ کوئی بھی انڈسٹری مالی مسائل کا شکارنہ ہو،آئندہ موسم سرما میں انڈسٹری اور گھریلو صارفین کو گیس کی قلت کا سامنا کرنا پڑے گا جس کیلئے گیس کی لوڈ مینجمنٹ کا پلان بنا لیا ہے  رواں مالی سال کے بجٹ میں پٹرولیم ڈویلپمنٹ لیوی کی وصولی کا ہدف 450ارب روپے رکھا گیا ہے جسے حاصل کرنے کیلئے ہر ماہ شرح میں ردو بدل کیا جاتا ہے لیکن اسے صفر نہیں کر سکتے  ان خیالات کا اظہار اپٹماہاؤس میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر اپٹما کے مرکزی چیئرمین عادل بشیر، پنجاب کے چیئرمین عبدالرحیم ناصرسمیت دیگر بھی موجود تھے۔ انہوں نے اپٹما کے عہدیداروں کو یقین دہانی کرائی کہ حکومت ٹیکسٹائل سیکٹر کے مسائل کو حل کر ے گی انہوں نے کہا کہ گزشتہ دنوں وزیر اعظم سیکرٹریٹ میں سیمینار کا انعقاد کیا گیا جس میں صوبائی حکومتوں نے بھی شرکت کی۔ سیمینار کے شرکاء کو آگاہ کیا گیا ہے کہ ملک میں گیس کی پیداوار تیزی سے کم ہو رہی ہے  فی الوقت گیس کی کمی کو ایل این جی کو سسٹم میں شامل کر کے پورا کر رہے ہیں سندھ کی انڈسٹری کو مقامی گیس فراہم کی جارہی ہے،ملک میں طلب کے مطابق رسد پوری کرنے کیلئے تین سے پانچ سال کا عرصہ درکار ہوگا اس موقع پر اپٹما کے سیکرٹری جنرل رضا باقرنے اپٹما کے مرکزی عہدیداروں کا اعلان کیا جس کے مطابق چیئرمین کے عہدے پر عادل بشیر، سینئر وائس چیئرمین کے عہدے پر زاہد مظہراور وائس چیئرمین کے عہدے پر حامد زمان بلا مقابلہ منتخب ہو گئے۔ 

ندیم بابر

مزید :

صفحہ اول -