عمرکوٹ: حالیہ بارشوں کے باعث ہزاروں ایکڑ رقبہ پر کھڑی تیار مرچ کی فصل ڈوب گئی

عمرکوٹ: حالیہ بارشوں کے باعث ہزاروں ایکڑ رقبہ پر کھڑی تیار مرچ کی فصل ڈوب گئی
عمرکوٹ: حالیہ بارشوں کے باعث ہزاروں ایکڑ رقبہ پر کھڑی تیار مرچ کی فصل ڈوب گئی

  

عمرکوٹ(سید ریحان شبیر  )عمرکوٹ ضلع میں  شدید حالیہ بارشوں کے باعث ہزاروں  ایکڑ رقبہ پر کھڑی تیار مرچ کی فصل سیلابی پانی میں  ڈوب گئی، کاشتکار اور غریب کسان رُل گئے ، ایشیا کی سب بڑی مرچ منڈی میں لال مرچ کی آمد برائے  نام رہ گئی ۔

تفصیلات کےمطابق  عمرکوٹ ضلع بھر میں حالیہ طوفانی بارشوں کے باعث ہزاروں  ایکڑ  رقبہ پر کھڑی تیار زرعی  فصیلں مرچ اور کپاس  زیرآب آگئی جس کے باعث  "80" فیصد سرخ مرچ کی فصل  تباہ ہوگئی اور کاشتکار کسان سڑکوں پر آگئے۔ بیوپاریوں کی ایڈوانس دی گئی لاکھوں روپے  کی رقم بھی ڈوب جانے کا خطرہ،  سال رواں میں سرخ مرچ کا شدید بحران سراٹھانے  لگا اور ملک بھرکی مرچ کی ضرورت پوری کرنے والی ایشیا کی سب سے بڑی سرخ مرچ منڈی کنری میں مرچ کی آمد برائے نام گئی ۔ مقامی تاجروں کا کہنا ہے کہ کنری مرچ منڈی میں نیا مرچ صرف برساتی مال ہے جس کے نرخ 13000 فی چالیس کلو  گرام ہیں جبکہ کچھ عرصہ قبل ایک نمبر اچھا کنری لونگی مرچ  25000 سے 30000 روپےمن تھی ایشیا میں کنری کی صنم مرچ،لونگی مرچ کافی مقبول ہےاور کھانوں کو لذیذ بنانے میں استعمال کیاجاتاہے ۔

عمرکوٹ ضلع کی تحصیلوں کنری،سامارو،پتھورو،اور عمرکوٹ میں شدید بارشوں کےبعد سیلابی صورتحال زمینداروں  کے کھیتوں میں سیلابی پانی جمع ہونےکے    باعث تاجروں سمیت کاشتکاروں کا   کروڑوں روپے  کانقصان ہوا ہے  جس کے باعث علاقے میں بیروزگاری اور معاشی بحران کاخدشہ بڑھنے کےامکانات پیدا ہوچلے ہیں۔

مزید :

علاقائی -سندھ -عمرکوٹ -