"نواز شریف شکوہ کر رہے ہیں کہ مشرف دور میں وعدے پورے ہوتے تھے لیکن یہ حکومت وعدے پورے نہیں کر رہی ، میاں صاحب کے پاس آپشن ختم ہوچکے ہیں"

"نواز شریف شکوہ کر رہے ہیں کہ مشرف دور میں وعدے پورے ہوتے تھے لیکن یہ حکومت ...

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) صحافی انصار عباسی کا کہنا ہے کہ نواز شریف کی تقریر سے ایسا لگا جیسے انہیں دیوار سے لگادیا گیا ہے اور ان کے پاس کوئی آپشن نہیں ہے، یہ شکوہ کر رہے ہیں کہ ان کے ساتھ کیے گئے وعدے پورے نہیں کیے جارہے۔

نجی ٹی وی سماء کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے انصار عباسی نے کہا کہ انہیں انتہائی قابل اعتماد ذرائع نے 2 سے 3 ہفتے پہلے بتایا ہے کہ جب سے میاں صاحب گئے ہیں ان کی بات چیت متعلقہ لوگوں کے ساتھ ہورہی تھی، مریم نواز کی بھی بات ہورہی تھی۔ ان کے ساتھ جو وعدہ وعید تھا وہ چیزیں ہوئی نہیں، بلکہ یہ تو یہ کہہ رہے ہیں کہ  جب مشرف دور میں ہم سے کوئی وعدہ کیا جاتا تھا تو وہ پورا ہوجاتا تھا لیکن اب ہمارے ساتھ وعدہ پورا نہیں کیا جارہا۔

انصار عباسی کے مطابق ووٹ کو عزت دو والی بات 2 سال پہلے ہوئی تھی جس پر میاں صاحب کو کچھ لوگوں نے سراہا بھی تھا لیکن  اس کے بیچ میں جو ہوتا رہا اس میں یوٹرن بھی تھا، آج پھر وہی موقف اپنالیا، ان کے پاس کوئی آپشن نہیں ہیں اس لیے انہوں نے کھل کر باتیں کیں۔ نواز شریف کی تقریر وہ تقریر تھی کہ جیسے انہیں دیوار کے ساتھ لگادیا گیا ہے اور ان کے پاس کوئی آپشن نہیں ہے۔

انہوں نے کہا کہ نواز شریف کے باہر جانے کے بعد مسلم لیگ ن کی دوسرے نمبر کی قیادت کے اہم حلقوں کے ساتھ تعلقات قائم ہوئے ۔ یہ قیادت اس انتظار میں ہوتی ہے کہ کب انہیں فون کرکے چائے پر بلایا جائے ۔

مزید :

علاقائی -اسلام آباد -