سندھ میں جنگلی حیات کاتحفظ ، محکمہ وائلڈ لائف نے بڑا قدم اٹھا لیا 

سندھ میں جنگلی حیات کاتحفظ ، محکمہ وائلڈ لائف نے بڑا قدم اٹھا لیا 
سندھ میں جنگلی حیات کاتحفظ ، محکمہ وائلڈ لائف نے بڑا قدم اٹھا لیا 

  

کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن)محکمہ برائےوائلڈلائف سندھ نےصوبے میں جنگلی حیات کے تحفظ کے لیے مختلف اضلاع میں وائلڈ لائف پروٹیکشن پولیس سٹیشنز قائم کر دیئے ہیں۔

محکمہ برائے تحفظِ جنگلی حیات کے کنزرویٹرجاوید مہر کے مطابق ابتدائی طورپردیہی سندھ کے اضلاع ٹھٹھہ، سجاول، بدین، ٹنڈو محمد خان، جامشورو اور حیدرآباد میں 6 پولیس سٹیشنز قائم کیے گئے ہیں، بہت جلد کراچی میں بھی ایک وائلڈ لائف پروٹیکشن پولیس سٹیشن قائم کیا جائےگا۔اس بارے میں انہوں نے بتایاکہ یہ پاکستان میں اپنی نوعیت کے پہلے پولیس سٹیشنز ہیں، جن کا قیام سندھ وائلڈ لائف پروٹیکشن، پریزرویشن، کنزویشن اور مینجمنٹ ایکٹ 2020ء کے تحت عمل میں آیا، یہ ایکٹ وائلڈ لائف کے عملے کو پولیس کا درجہ دیتا ہے۔

جاوید مہر کے مطابق کسی بھی جنگلی جانورکے حوالے سے پہلے جرم پر ملزمان کی گرفتاری کے لیے رپورٹ کا اندارج کیا جائے گا،اس حوالے سے انفرادی سطح پر کوئی بھی فرد جنگلی حیات کے حوالے سے رپورٹ درج کرواسکے گا،ان سٹیشنزکے قیام سے ان تمام مافیاز کے حوصلے پست ہوں گے، جو کسی نہ کسی حوالےسے غیرقانونی طورپرجنگلی حیات کی خریدوفروخت میں ملوث ہونے کے علاوہ بیش ترجنگلی اورآبی حیات کی بیرون ملک سمگلنگ میں بھی ملوث ہیں۔

مزید :

علاقائی -سندھ -کراچی -