پانچ سالوں کے دوران ہاکی اکیڈمیز پر 23 ارب 82 کروڑ 46 لاکھ روپے سے زائد کی رقم خرچ کی گئی، قومی کھیل پھر بھی زوال پذیر

پانچ سالوں کے دوران ہاکی اکیڈمیز پر 23 ارب 82 کروڑ 46 لاکھ روپے سے زائد کی رقم ...

  

اسلام آباد(آن لائن) ملک بھر میں کھیلوں کے فروغ کیلئے حکومت نے گذشتہ پانچ سال کے دوران ہاکی اکیڈمیز کے قیام کے تحت 18 مراکز کو گذشتہ پانچ سالوں کے دوران 23 ارب 82 کروڑ 46 لاکھ روپے سے زائد کی رقم خرچ کی گئی پھر بھی قومی کھیل زوال پذیر ہورہا ہے جس پر کھیل سے متعلقہ حلقوں نے اعلیٰ حکام سے اس کا نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔ ”آن لائن“ کو موصول شدہ دستاویزات کے مطابق ہاکی اکیڈمیز کے 18 مراکز میں کراچی میں 2‘ حیدرآباد‘ لاہور 2‘ پشاور‘ کوئٹہ‘ فیصل آباد‘ گوجرانوالہ‘ بہاولپور‘ بنوں‘ ایبٹ آباد‘ سیالکوٹ‘ سرگودھا‘ منڈی بہاﺅالدین‘ شیخوپورہ‘ وہاڑی اور ملتان شامل ہیں

۔ دستاویزات کے مطابق 2008-09ءمیں 5 کروڑ 61 لاکھ روپے سے زائد‘ 2009-10 میں 14 کروڑ 69 لاکھ سے زائد‘ 2010-11ءمیں 8 کروڑ 95 لاکھ روپے سے زائد‘ 2011-12ءمیں 9 کروڑ 35 لاکھ سے زائد‘ 2012-13ءمیں 61 کروڑ 43 لاکھ سے زائد رقم خرچ کی گئی۔

مزید :

کھیل اور کھلاڑی -